The news is by your side.

Advertisement

سندھ میں‌ ایک اور کرونا کیس کی تصدیق، تعداد چار ہوگئی

کراچی: سندھ میں کرونا وائرس کا ایک اور کیس سامنے آگیا جس کی صوبائی حکومت نے بھی تصدیق کردی۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ کی زیرصدارت کرونا وائرس ٹاسک فورس کا اجلاس ہوا جس میں ایک اور کیس سامنے آنے کی تصدیق کی گئی۔

وزیراعلیٰ کے ترجمان کے مطابق آج کرونا وائرس کے 4 ٹیسٹ کیے گئے جن میں سے تین کے منفی جبکہ ایک کا مثبت نتیجہ آیا، مریض کا تعلق کراچی سے ہے۔

اجلاس میں حکام نے بریفنگ دی کہ محکمہ صحت نے 107 افراد کے نمونے حاصل کر کے اُن کے ٹیسٹ کیے، جن میں سے 4 کی رپورٹس مثبت آئیں جبکہ ایک مریض صحت یاب ہوکر گزشتہ روز گھر منتقل ہوگیا ہے۔

مزید پڑھیں: پاکستان کی بڑی کامیابی ،کرونا وائرس کا پہلا مریض اسپتال سے ڈسچارج

وزیر اعلیٰ سندھ نے کرونا وائرس کی تصدیق ہونے والے شخص کے قریبی اور رابطے میں رہنے والوں کی اسکرینگ کرنے کی ہدایت کی۔

یاد رہے کہ پاکستان میں اب تک کرونا کے 7 کیسز رپورٹ ہوئے جن میں سے چار کا تعلق سندھ سے ہے۔  ایک روز قبل کراچی کے اسپتال میں زیر علاج مریض کو صحت یاب ہونے کے بعد گھر جانے کی اجازت دی گئی۔

محکمہ صحت سندھ نے بھی  کرونا وائرس کے پہلے مریض یحییٰ جعفری کے صحت یاب ہونے کی تصدیق کی تھی۔

یاد رہے کہ پاکستان میں کرونا وائرس کا پہلا کیس 26 فروری کو کراچی میں سامنے آیا تھا اور ایک 22 سالہ نوجوان میں کرونا وائرس کی تصدیق ہوئی تھی جسے فوری طور پر اسپتال کے آئسولیشن وارڈ میں رکھ دیا گیا تھا۔

بعد ازاں متاثرہ افراد کے اہل خانہ کی اسکیننگ کی گئی اور مختلف ٹیسٹ لیے گئے اور سب کو کلیئر قرار دیا گیا تھا۔

خیال رہے کہ پاکستان میں اب تک کرونا وائرس کے رپورٹ ہونے والے مریض حال ہی میں  ایران کا سفر کر کے آئے ہیں۔ چند روز قبل ہی معاون خصوصی ڈاکٹر ظفر مرزا میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا تھا کہ کورونا وائرس کا شکار 3 افراد روبہ صحت ہیں۔

واضح رہے کہ مہلک کرونا وائرس کے سبب دنیا بھر میں اب تک 4 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہوچکے ہیں، امریکا میں وائرس سے 12 افراد زندگی کی بازی ہار گئے ہیں اور وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد ایک لاکھ سے تجاوز کرگئی ہے۔

چین کے شہر ووہان سے پھیلنے والا کرونا وائرس دنیا کے 95 ممالک میں پھیل چکا ہے، روزانہ کی بنیاد پر نہ صرف کیسز رپورٹ ہورہے ہیں بلکہ اموات بھی سامنے آرہی ہیں۔ عالمی ادارہ صحت نے اس صورت حال کو تشویشناک قرار دیتے ہوئے تمام ممالک سے اقدامات کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں