The news is by your side.

Advertisement

برطانیہ میں ایک اور پاکستانی ڈاکٹر نے کورونا کے محاذ پر جان دیدی

لندن: برطانیہ میں کورونا وائرس کے خلاف جنگ میں لڑتے ہوئے ایک اور پاکستانی ڈاکٹر نے جان دے دی۔

ڈاکٹر فرقان علی صدیقی کی عمر 54 سال تھی اور انھوں نے میڈیکل کی تعلیم ڈاو میڈیکل کالج سے 1991 میں حاصل کی تھی۔

انگلینڈ میں اعلی تعلیم حاصل کرنے کے بعد وہ واپس پاکستان چلے گئے تھے تا کہ اپنے والدین اور ملک کی خدمت کر سکیں۔

چھ ماہ پہلے وہ واپس انگلینڈ مذید ٹریننگ کے لئے آئے تھے لیکن بدقسمتی سے وہ بھی کوواڈ-19 وائرس کا شکار ہو گئے اور فرنٹ لائن پر لڑتے ہوئے جان کی بازی ہار گئے۔

فرقان ایک بہت ہی نفیس، ہر دلعزیز اور محبت کرنے والے انسان تھے۔ انہوں نے ہمیشہ ہر ایک کا خیال رکھنے کی کوشش کی چاہے وہ مریض ہوں، دوست احباب ہوں یا فیملی وہ ہمیشہ ہر ایک سے مسکرا کر ملتے تھے۔ وہ ایک رحم دل، سخی اور پرجوش روح تھی جو ان کے مریضوں، ساتھیوں اور دوستوں کو مدتوں ان کی یاد دلاتی رہے گی۔

انھوں نے ہمیشہ اپنے بوڑھے ماں باپ کا خیال رکھا اور اپنی بیوی اور بچوں کی خدمت سے سرشار تھے۔ وہ ایک دیندار اور متقی انسان تھے۔ ان کی مذہبی وابستگی ان کی زندگی اور ان کے کام میں ان کی رہنمائی کرتی بخوبی دیکھی جا سکتی تھی۔

ان کی یاد لوگوں کے دلوں میں ہمیشہ رہے گی۔ ہم سب کی نیک خواہشات اور دعائیں ان کے اور ان کی فیملی کے لئے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں