The news is by your side.

Advertisement

ملک میں پولیو کے 2 نئے کیسز سامنے آ گئے، تعداد 27 ہو گئی

اسلام آباد: ملک میں پولیو وائرس کے 2 نئے کیسز سامنے آ گئے، ذرایع قومی ادارہ صحت کا کہنا ہے کہ رواں برس کے پولیو کیسز کی مجموعی تعداد 27 ہو گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ملک میں دو نئے پولیو کیسز رپورٹ ہوئے ہیں، جن کا تعلق بلوچستان اور خیبر پختون خوا سے ہے، بلوچستان میں پولیو وائرس کا نیا کیس رپورٹ ہونے کے بعد صوبے میں رواں سال پولیو وائرس کے کیسز کی تعداد 5 ہو گئی ہے۔

قومی ادارہ صحت کا کہنا ہے کہ کے پی ضلع ٹانک کی 3 سال کی بچی میں پولیو وائرس کی تصدیق ہوئی، پولیو کی شکار بچی کا تعلق ٹانک کی یو سی خیسرائے سے ہے۔ بلوچستان کے ضلع ژوب کا 2 سالہ بچہ پولیو وائرس کا شکار ہوا جس کا تعلق ژوب کی یو سی بدین زئی سے ہے۔

محکمہ صحت کے مطابق ژوب سے تعلق رکھنے والے بچے کے نمونے 26 اور 27 فروری کو حاصل کیے گئے تھے، متاثرہ بچے کے والدین پولیو سے بچاؤ کے قطرے نہیں پلاتے تھے۔ گزشتہ ماہ فروری میں پشین کی یو سی تراٹہ میں بھی ایک کیس سامنے آیا تھا، مجموعی طور پر ایک ہی دن پانچ نئے کیسز سامنے آئے تھے، معلوم ہوا تھا کہ موذی مرض کے شکار بچوں کے والدین پولیو ویکسی نیشن سے انکاری تھے۔

پولیو کے دو نئے کیسز کی تصدیق

پانچ مارچ کو بھی دو کیسز رپورٹ ہوئے تھے جن میں سے ایک کا تعلق خیبر کے علاقے باڑہ سے تھا جب کہ دوسرے کا سندھ کے شہر شکارپور سے تھا۔ خیال رہے کہ پولیو کے حوالے سے سال 2019 بد ترین رہا جب ملک بھر میں 144 پولیو کیسز ریکارڈ کیے گئے، پولیو کی یہ شرح 2014 کے بعد بلند ترین شرح ہے۔ 2014 میں پولیو وائرس کے 306 کیسز سامنے آئے تھے اور یہ شرح پچھلے 14 سال کی بلند ترین شرح تھی۔

دو دن قبل ڈاکٹر ظفر مرزا کی زیر صدارت پولیو کی موجودہ صورت حال کے جائزہ اجلاس میں بتایا گیا کہ پولیو کے خاتمے کے لیے مربوط حکمت عملی پر عمل درآمد جاری ہے، ہائی رسک یونین کونسلز میں مؤثر اقدامات کو یقینی بنایا جا رہا ہے، دسمبر کے مقابلے میں فروری مہم زیادہ کامیاب رہی تھی، انکاری والدین کی تعداد میں کمی آئی ہے، اپریل 2020 میں ہونے والی قومی مہم میں مزید کامیابی حاصل کریں گے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں