The news is by your side.

Advertisement

طالبان کو اپنی حمایت کے حصول کے لیے وعدے پورے کرنا ہوں گے: امریکی وزیر خارجہ

واشنگٹن: امریکی وزیر خارجہ انتھونی بلنکن کا کہنا ہے کہ سو سے 200 کے قریب امریکی اب بھی افغانستان میں موجود ہیں، ویزہ ہولڈر افغانوں کو افغانستان چھوڑنے کی اجازت دی جائے۔ طالبان کو اپنی قانونی حیثیت یا حمایت کے حصول کے لیے اپنے وعدے پورے کرنا ہوں گے۔

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق امریکی وزیر خارجہ انتھونی بلنکن نے پریس بریفنگ کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی کے خطرے کے سائے میں انخلا کا آپریشن مکمل کیا گیا، افغانستان میں فوجی مشن ختم اور سفارتی مشن شروع ہو چکا ہے۔

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ اس وقت امریکی سفارت کار افغانستان سے جا چکے ہیں، دوحہ میں امریکی سفارت کار طالبان سے رابطہ کریں گے۔ 1 لاکھ 23 ہزار سے زائد افراد کو بحفاظت افغانستان سے منتقل کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ 100 سے 200 کے قریب امریکی اب بھی افغانستان میں موجود ہیں، ہم طالبان سے کہہ رہے ہیں افغان عوام کو آزادی سے انخلا کا موقع دیں، ویزہ ہولڈرز کو افغانستان چھوڑنے کی اجازت دی جائے۔

امریکی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ افغانستان سے امریکی سفارتی موجودگی ختم کر کے قطر منتقل کردی ہے، خطے میں انسداد دہشت گردی کی صلاحیت برقرار رکھیں گے۔ انخلا میں مدد کرنے والے ممالک کے شکر گزار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ طالبان کے بجائے دیگر اداروں کے ذریعے افغان عوام تک امداد پہنچائیں گے، افغانستان میں امریکا کا کام جاری ہے۔ افغانستان میں امن برقرار رکھنے پر مسلسل توجہ مرکوز رکھیں گے، افغانستان کے ساتھ امریکی تعلقات کا نیا باب شروع ہوچکا ہے۔ طالبان کو اپنی قانونی حیثیت یا حمایت کے حصول کے لیے اپنے وعدے پورے کرنا ہوں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں