The news is by your side.

Advertisement

آرمی چیف کے ساتھ ایل او سی کا دورہ، اے آروائی نیوز کا خصوصی اعزاز

آرمی چیف اور دی رپورٹرز کی ٹیم نے ابھی نندن کو گرفتار کرنے والے یونٹ اور جوانوں کے ساتھ وقت گزارا

راولپنڈی: آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کے ساتھ اے آروائی نیوز کے پروگرام دی رپورٹرز کی ٹیم نے ایل او سی کا دورہ کیا۔پاک فوج کے سربراہ کے ساتھ کسی بھی میڈیا ٹیم کا یہ پہلا دورہ ہے۔

تفصیلات کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ایل او سی کا دورہ کیا۔اے آروائی نیوز کے پروگرام دی رپورٹرز کی ٹیم بھی آرمی چیف کے ہمراہ تھی۔آرمی چیف اور دی رپورٹرز کی ٹیم نے ابھی نندن کوگرفتار کرنے والے یونٹ افسران،جوانوں کے ساتھ دن گزارا۔

پاک فوج کے سربراہ کے ساتھ کسی بھی میڈیا ٹیم کا یہ پہلا دورہ ہے۔آرمی چیف کے ساتھ ایل او سی کا دورہ کرنا اے آروائی نیوز کا خصوصی اعزاز ہے۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے دی رپورٹرز کی ٹیم کے ساتھ غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نریندر مودی کا کشمیر ماڈل تباہ اور ناکام ہوچکا ہے،کشمیریوں اور عالمی برادری نے بھارتی اقدامات تسلیم نہیں کیے،بھارت اپنی مقبوضہ کشمیرمیں ناکامیوں کا ملبہ پاکستان پر ڈالنا چاہتا ہے۔

پاک فوج کے سربراہ کا کہنا تھا کہ بی جے پی کی حکومت ہندوتوا کے نظریے کا غلبہ چاہتی ہے،مودی کے انتہا پسندانہ اقدامات سے بھارت کا چہرہ مسخ ہوگیا۔

انہوں نے کہا کہ بھارت کے سی اے اے، این آر سی جیسے قوانین پر عالمی سطح پر تشویش ہے،بھارت اقلیتوں کو ختم کرنا چاہتا ہے،عالمی تنظیمیں بھی بھارت سے متعلق تشویش کا اظہار کرچکی ہیں۔

دی رپورٹرز کی ٹیم سے گفتگو کرتے ہوئے جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا تھا کہ بھارت پاکستان اور چین کے خلاف سازشوں میں مصروف ہے،افواج پاکستان مادر وطن کا دفاع کرنے کی بھرپور صلاحیت رکھتی ہے۔

آرمی چیف نے کہا کہ پاک فوج ایک منظم ادارہ ہے،پاک فوج میں احتساب کا موثر نظام ہے،ایک افسرکی بیوی کی ویڈیو سامنے آنے پر افسر اور اس کی اہلیہ کے خلاف سخت ترین کارروائی ہوچکی ہے۔

پاک فوج کے سربراہ کا کہنا تھا کہ پاکستان کی ترقی،خوشحالی،مستقبل صرف اور صرف جمہوریت میں ہے،اداروں کو مضبوط کرنا ہوگا، تمام مسائل کا حل نظام اور جمہوریت کے اندر ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں جس طبقے پر ہاتھ ڈالیں وہ مافیا کی طرح ری ایکٹ کرتا ہے۔

پاک فوج کے سربراہ کا ایل او سی پر جوانوں سے خطاب

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ایل او سی کے دورے کے دوران جوانوں کے ساتھ نماز عید ادا کی اور ابھی نندن کو گرفتار کرنے والے یونٹ افسران، جوانوں کے ساتھ دن گزارا۔

اس موقع پر پاک فوج کے سربراہ نے جوانوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جن جوانوں سےخطاب کر رہا ہوں، یہ یونٹ100جانیں قربان کرچکا ہے،شہدا کا اجر صرف اللہ تعالیٰ کے پاس ہے۔انہوں نے کہا کہ پاک فوج کا ہر جوان ہمارے لیے انتہائی اہم ہے۔

آرمی چیف کا کہنا تھا کہ پاک فوج کے جوان قرآن مجید سے استفادہ کریں،جوان رمضان کے بعد بھی قرآن مجید سے اپنا رابطہ مضبوط رکھیں،دین اسلام تحمل،بردباری اور برداشت کا درس دیتا ہے۔انہوں نے کہا کہ اسلام میں حقوق العباد نہ نبھانے پرمعافی نہیں ہے۔

جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ کرونا،سیلاب،زلزلہ ہر آفت میں مسلح افواج نے قومی ذمہ داری سمجھ کر فرض نبھایا،کرونا کے باعث بہت سےسقم سامنے آئے ہیں،پاک فوج کرونا سے محفوظ رہنے کے لیے غیر معمولی احتیاط برتے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں