The news is by your side.

Advertisement

منی لانڈرنگ کیس: آصف زرداری کا سپریم کورٹ میں‌ پیش نہ ہونے کا فیصلہ

اسلام آباد: منی لانڈرنگ کیس میں پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری نے آج سپریم کورٹ میں پیش نہ ہونے کا فیصلہ کیا ہے، پی پی رہنما فرحت اللہ بابر کا کہنا ہے کہ قانونی ٹیم معاملات کو دیکھ رہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق منی لانڈرنگ کیس کے حوالے سے آصف زرداری نے وکلا سے مشاورت کے بعد سپریم کورٹ میں پیش نہ ہونے کا فیصلہ کیا جس کی تصدیق پی پی کے رہنما نے کردی، فرحت اللہ بابر کا کہنا تھا کہ آصف زرادری اسلام آباد جارہے ہیں البتہ وہ عدالت میں پیش نہیں ہوں گے۔

اُن کا کہناتھا کہ سپریم کورٹ میں پیشی کا کوئی فیصلہ نہیں ہوا کیونکہ اس معاملے کو وکلا دیکھ رہے ہیں، وہ کل عدالت میں جواب جمع کرائیں گے۔

پی پی کے شریک چیئرمین کے وکلا کی ٹیم میں لطیف کھوسہ، فاروق ایچ نائیک اور اعتزاز احسن شامل ہیں، خیال رہے کہ سپریم کورٹ نے آصف زرداری اور فریال تالپور کو آج طلب کر رکھا ہے۔

ذرائع کے مطابق آصف زرداری کے ہمراہ نیئر بخاری اور راجہ پرویز اشرف لاہور سے اسلام آباد پہنچیں گے۔

دریں اثنا سپریم کورٹ نے آئی جی سندھ کو حاضری یقینی بنانے کا حکم جاری کر دیا ہے، تاہم آصف زرداری اور اُن کی ہمشیرہ فریال تالپور نے عدالت میں نہ پیش ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔

دوسری جانب  ایف آئی اے نے آصف زرداری اور فریال تالپور کو الیکشن سے پہلے بلانے کا فیصلہ کر لیا، جبکہ پیپلزپارٹی کے قائدین نے ایف آئی اے سے الیکشن کے بعد تک مہلت مانگی تھی۔

آصف زرداری اور فریال تالپور نے ایف آئی اے سے الیکشن کے بعد تک کی مہلت مانگ لی


ذرائع کے مطابق ایف آئی اے کی طرف سے آصف زرداری اور فریال تالپور کو 23 جولائی کو بیان دینے کے لیے دوبارہ نوٹس بھیجا جائے گا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں