The news is by your side.

Advertisement

فائدہ مند ادرک نقصان دہ کب بن سکتی ہے؟

ادرک اپنے بے شمار فائدوں کے سبب سپر فوڈ کہلاتی ہے، اس کے اندر خصوصیات کا خزانہ ہے، لیکن بعض حالات میں ادرک فائدے کے بجائے نقصان بھی پہنچا سکتی ہے۔

ہاضمے کی خرابی اور متلی میں اس کا استعمال جادوئی اثر رکھتا ہے، اس حیرت انگیز سبزی کی بے پناہ افادیت ہے لیکن کچھ حالات میں اسے غذا میں شامل رکھنا نقصان کا باعث بن سکتا ہے۔

حمل کے دوران

ادرک میں پائے جانے والے اجزا پٹھوں کی صحت بڑھانے اور نظام انہضام کو بہتر بنانے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں، تاہم حاملہ خواتین میں اس کا استعمال بچے کی قبل از وقت پیدائش کا سبب بن سکتا ہے۔

خاص طور پر حمل کے 3 ماہ میں ادرک کے استعمال سے گریز کا مشورہ دیا جاتا ہے۔

مخصوص ادویات کا استعمال

ایسے افراد جو بلڈ پریشر اور ذیا بیطس کے لیے مخصوص ادویات استعمال کرتے ہیں، ادرک ان ادویات کے اثرات کو کم کر سکتی ہے جس سے مرض میں بگاڑ پیدا ہوسکتا ہے۔

پتھری

اگر آپ پتے میں پتھری کا شکار ہیں تو ادرک کا استعمال خطرناک ثابت ہوسکتا ہے کیونکہ یہ پتھری بننے کی عمل کو بڑھا دیتی ہے۔

کم وزن کے حامل افراد

ادرک ریشوں یعنی فائبر سے بھرپور ہوتی ہے، یہی وجہ ہے کہ اس کے استعمال سے پیٹ کی پی ایچ بڑھ سکتی ہے اور ہاضمہ تیز کرنے والے عوامل متحرک ہوسکتے ہیں۔

یہ صورتحال فربہ افراد کے لیے تو آئیڈیل ہے لیکن کم وزن کے حامل افراد کے وزن میں مزید کمی ہوسکتی ہے۔

اگر آپ وزن بڑھانا چاہتے ہیں، یا آپ کا وزن مناسب ہے اور آپ اس میں کمی نہیں چاہتے تو ادرک کا استعمال کم کر دیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں