The news is by your side.

Advertisement

انسداد دہشت گردی عدالت، سانحہ بلدیہ فیکٹری کیس میں نیا موڑ

کراچی: انسداد دہشت گردی میں سانحہ بلدیہ کیس کے ملزمان ایم کیو ایم کے سابق سیکٹر انچارج عبدالرحمان بھولا، زبیر چریا نے حتمی بیان ریکارڈ کرادیا۔

تفصیلات کے مطابق انسداد دہشت گردی عدالت میں سانحہ بلدیہ کیس کے دونوں ملزمان عبدالرحمان بھولا اور زبیر چریا آگ لگانے کے بیان سے مکر گئے۔

ملزم عبدالرحمان بھولا اور زبیر چریا سے 380 سے زائد سوالات پوچھے گئے، ملزمان نے عدالت میں سوالات کے تحریری جواب جمع کرادئیے۔

ملزم عبدالرحمان بھولا کا کہنا تھا کہ فیکٹری میں آتشزدگی کے وقت ایم کیو ایم بلدیہ سیکٹر کا انچارج تھا لیکن آگ لگانے میں ملوث نہیں ہوں۔

مزید پڑھیں: سانحہ بلدیہ فیکٹری کیس فیصلہ کن مراحل میں داخل

دوسرے ملزم زبیر چریا نے کہا کہ علی انٹرپرائز کے فشنگ ڈپارٹمنٹ کا انچارج تھا، آگ لگی یا لگائی اس کے بارے میں نہیں جانتا۔

واضح رہے کہ اس سے قبل ملزمان بھتہ نہ دینے پر فیکٹری کو آگ لگانے کا اعتراف کرچکے ہیں، عدالت نے سماعت ملتوی کرتے ہوئے 3 فروری کو اسپیشل پبلک پراسیکیوٹر کے دلائل طلب کرلیے۔

یاد رہے کہ کراچی کے علاقے بلدیہ ٹاوٗن میں 11 ستمبر 2012 کو خوفناک آتشزدگی کا واقعہ پیش آیا تھا جس میں ڈھائی سو کے لگ بھگ ملازمین جل کر خاکستر ہوگئے تھے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں