The news is by your side.

Advertisement

خیبر پختونخوا اوربلوچستان کے وزرائے اعلیٰ کا فیصلہ الیکشن کمیشن اور پالیمانی کمیٹی کرے گی

پشاور : نگراں وزرائے اعلیٰ خیبر پختونخوا اور بلوچستان کے نام پر سیاسی جماعتیں کسی نتیجے پر نہ پہنچ سکیں، جس کے بعد وزیر اعلیٰ کے ناموں کا فیصلہ پارلیمانی کمیٹی اور الیکشن کمیشن کرے گا۔

تفصیلات کے مطابق بلوچستان اور خیبر پختونخوا میں نگراں وزرائے اعلٰی کی تلاش کا معاملہ ہنوز حل طلب ہے، خیبرپختونخوا میں سیاسی جماعتیں کسی ایک نام پر متفق ہونے میں ناکام ہوگئیں۔

نگران سیٹ اپ پر چھائےخدشات کے بادل نہ چھٹ نہ سکے، دونوں جانب سے میں نہ مانوں کی رٹ برقرار ہے، پرویزخٹک اورسابق اپوزیشن لیڈرکے بعد پارلیمانی کمیٹی کی بیٹھک بھی بے نتیجہ ختم ہوگئی۔

نگراں وزیراعلیٰ کے پی کا معاملہ الیکشن کمیشن کو بھیجنے پراتفاق ہوگیا، جس کے بعد نگران وزیراعلیٰ کا چناؤ الیکشن کمیشن کرے گا، سابق چیف جسٹس کے پی اعجاز قریشی اور ریٹائرڈ بیورو کریٹ حمایت اللہ حکومت کے نامزد امیدوارہیں جبکہ حزب اختلاف نے منظور آفریدی اورجسٹس ریٹائرڈ دوست محمد کا نام د یا ہے،الیکشن کمیشن آئندہ دو روز میں ان چار ناموں میں سے ایک نام کا فیصلہ کرے گا۔

دوسری جانب نگران وزیراعلیٰ بلوچستان کی تلاش بھی تاحال جاری ہے، عبدالقدوس بزنجو اور عبدالرحیم زیارتوال پانچ ملاقاتوں کے بعد کسی امیدوارکا انتخاب نہ کرسکے۔

نگراں وزیراعلٰی کے معاملےپر مشاورتی اجلاس ختم ہوگیا، فریقین میں ڈیڈ لاک تاحال برقرار ہے جس کے بعد نگران وزیراعلیٰ بلوچستان کا معاملہ پارلیمانی کمیٹی کے سپرد کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، حکومت اور اپوزیشن نے 2،دو نام پارلیمانی کمیٹی کو بھیجے ہیں۔

اپوزیشن نے وکیل رہنما علی احمد کرد کا نام دیا ہے،  آج کسی نام پر اتفاق نہ ہوا تو یہ گیند بھی الیکشن کمیشن کے کورٹ میں چلی جائے گی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں