The news is by your side.

’بینکوں کو کہا گیا ایل سیز نہ کھولیں کیونکہ ڈالرز نہیں ہیں‘

سابق چیئرمین ایف بی آر و ماہرِمعاشیات میری اطلاعات ہے بینکوں نے آج ایل سیز کھولنے سے انکار کیا ہے بینکوں کو ہدایات دی گئی ہیں کہ ایل سیز نہ کھولیں کیونکہ ڈالرز نہیں۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام دی رپورٹرز میں گفتگو کرتے ہوئے شبرزیدی نے کہا کہ میری نظر میں حکومت نے ڈیفالٹ ہونے سے متعلق آگاہ کر دیا ہے میری اطلاعات کے مطابق 4 ملین ڈالرز کی ایل سیز التوا کا شکار ہیں ایل سیز کے التوا کی وجہ سےملک میں کسی قسم کاخام مال نہیں آرہا۔

شبرزیدی نے کہا کہ آئی ایم ایف نے بھی ٹیکس کلیکشن نہ بڑھانے تک مذاکرات سے انکار کر دیا ہے آئی ایم ایف کہتا ہے کہ پہلےٹیکس کلیکشن بڑھائیں پھربات ہوگی، آئی ایم ایف کہتاہےموجودہ حکومت نےٹیکس کلیکشن کا ٹارگٹ پورا نہیں کیا۔

ماہرمعاشیات کا کہنا تھا کہ امپورٹ بڑھاتے ہیں تو ٹیکس کلیکشن نہیں ہو گی امپورٹ نہیں بڑھائیں گے تو ڈالرز کی مقدار موجود نہیں معیشت کیلئےاس حکومت نےایک بھی مثبت قدم نہیں اٹھایا معاشی بحران بگڑتا جا رہا ہے ملک کی بہتری کیلئے نہیں سوچا جا رہا چیزیں موجودہ حکومت کےکنٹرول سےباہر نکل چکی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اسحاق ڈار نے 2013 سے 2018 تک مصنوعی سہارے پر ڈالر کو رکھا اسحاق ڈارکےپاس کوئی راکٹ سائنس نہیں اسحاق ڈارنےامپورٹ کی بنیادپرمعیشت چلائی لیکن ملک تباہ کردیا اسحاق ڈار ذمہ دار ہیں جس کی وجہ سے آج ملک ڈیفالٹ ہونےجا رہا ہے۔

تجاویز

شبرزیدی نے معاشی صورتحال پر قابو پانے کے لیے ہنگامی اقدامات پر زور دیتے ہوئے کہا کہ پیٹرول کےاستعمال کو کم کریں جس سےمعیشت کو تھوڑا سہارا ملے ایسا قانون بنائیں کہ ہفتےمیں3دن کوئی 1500سےبڑی گاڑی سڑک پر نہیں آئے۔

انہوں نے تجویز دی کہ حج اور عمرے کو اسپانسر کرائیں تاکہ کمپنیاں خود تیل کےخرچے پورے کریں، معیشت کےلیےسرکاری حکام کےغیرملکی دوروں پرپابندی لگائیں۔

ماہرمعاشیات نے مشورہ دیا کہ امپورٹڈ آئل استعمال کرنے والی کمپنیوں کومقامی آئل کے استعمال کا پابند کریں دوسرے ممالک میں جاکر بھیک مانگنے سے بہتر ہے بازار جلد بند کر کے بجلی بچائیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں