The news is by your side.

Advertisement

وہیل چیئر پر بیٹھی اور مصنوعی پاؤں والی باربی ڈول

جسمانی معذوری کہیں تو ناامیدی کا پیغام بن جاتی ہے تو کہیں ہمت و حوصلہ عطا کر کے ایسے کام کروادیتی ہے جو عام حالات میں شاید کسی کے لیے ممکن نہ ہوں۔

ہم دیکھتے آئے ہیں کہ صلاحیت، ہنر اور جذبہ کسی سہارے کا محتاج نہیں اور پہاڑوں جیسا عزم ہو تو بڑی سے بڑی معذوری کو شکست دے کر بھی بڑے سے بڑے کارنامہ انجام دیا جاسکتا ہے۔

یہی سوچ کر مشہور امریکی ٹوائے کمپنی میٹل معذوری کا شکار باربی ڈولز لانچ کرنے جارہی ہے تاکہ دنیا کو یہ پیغام دیا جاسکے کہ معذوری صرف ایک نظر کا دھوکہ ہے۔

یہ باربی ڈولز 13 سالہ امریکی بچی جورڈن سے متاثر ہو کر تیار کی جارہی ہیں۔

جورڈن اپنے بائیں بازو سے محروم ہے تاہم 3 ڈی پرنٹنگ کے ذریعے اپنے بازو کے لیے نت نئی اشیا بناتی رہتی ہے۔

حال ہی میں اس نے یونی کورن (ایک تصوراتی جانور) کا ایسا سینگ تیار کیا جو گلیٹر پھینکتا تھا، یعنی اسے اپنے ہاتھ پر لگا کر وہ لوگوں کو چمکتی افشاں سے نہلا دیتی تھی۔

جورڈن کا حوصلہ دیکھتے ہوئے میٹل اب ایسی گڑیائیں پیش کرنے جارہی ہے جو وہیل چیئر پر بیٹھی ہوں جبکہ کچھ مصنوعی اعضا سے آراستہ ہوں گی۔

میٹل کا کہنا ہے کہ وہ دنیا کو بتانا چاہتے ہیں کہ خوبصورتی کا مطلب کاملیت نہیں۔ خوبصورت اور فیشن کی کئی جہتیں ہوسکتی ہیں۔

کمپنی کا کہنا ہے کہ ان کا عزم ہے کہ وہ دنیا کی سب متنوع گڑیائیں پیش کریں تاکہ ہر انسان انہیں خود سے قریب محسوس کرسکے۔

ان میں دنیا کے وہ 15 فیصد افراد بھی شامل ہیں جو کسی نہ کسی قسم کی معذوری کا شکار ہیں۔

13 سالہ جورڈن بھی اپنے جیسی گڑیا پاکر بے حد خوش ہے۔

آپ کو یہ گڑیا کیسی لگی؟ ہمیں کمنٹس میں ضرور بتائیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں