پاکستان میں نہیں کھیل سکتے نہ پاکستان کو بھارت بلا سکتے ہیں، بھارتی کرکٹ بورڈ bcci
The news is by your side.

Advertisement

پاکستان میں نہیں کھیل سکتے نہ پاکستان کو بھارت بلا سکتے ہیں، بھارتی کرکٹ بورڈ

دبئی: انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) ڈسپیوٹ ریزولیشن کمیٹی کی دوسرے دن کی سماعت مکمل ہوگئی، بھارت نے اپنا موقف پیش کردیا، بھارت کا کہنا ہے کہ پاکستان میں نہیں کھیل سکتے نہ پاکستان کو بھارت بلا سکتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق دبئی میں آئی سی سی ہیڈ کوارٹر میں ڈسپیوٹ ریزولیشن کمیٹی کی سماعت دوسرے روز بھی ہوئی، بھارتی کرکٹ بورڈ کی طرف سے رتنا شیٹھی اور بی سی سی آئی کے سابق سیکریٹری سنجے پٹیل نے موقف پیش کیا۔

پاکستان سے دو طرفہ سیریز نہ کھیلنے پر بھارتی حیلے بہانے وہاں بھی جاری رہے، بھارت نے موقف پیش کیا کہ بھارتی کرکٹ ٹیم پاکستان نہیں جاسکتی، وہاں حالات ٹھیک نہیں ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں دس سال سے کوئی ٹیم میچز کھیلنے نہیں گئی، پاکستان کو بھارت میں مدعو نہیں کرسکتے کیونکہ پاکستانی کھلاڑیوں کے لیے مسائل پیدا ہوسکتے ہیں اسی لیے ایشیا کپ دبئی میں کرایا، فی الحال پاکستا نکے ساتھ سیریز ممکن نہیں۔

مزید پڑھیں: پاک بھارت کرکٹ قانونی جنگ، سماعت کا آغاز، نجم سیٹھی بطور گواہ پیش

واضح رہے کہ پاکستان سے طے شدہ سیریز کھیلنے سے انکار پر بھارت کے خلاف آئی سی سی ڈسپیوٹ کمیٹی میں قانونی جنگ جاری ہے جس میں گزشتہ روز سابق چیئرمین پی سی بی نجم سیٹھی بطور گواہ پیش ہوئے تھے اور انہوں نے اپنا موقف پیش کیا تھا۔

سماعت کے تیسرے روز کے پہلے سیشن میں بھی بھارتی حکام اپنا موقف پیش کریں گے، دونوں ممالک کے تنازع کو سننے والا پینل مائیکل بیلوف اور جان پالسن انابیلے بینٹ پر مشتمل ہے۔

یاد رہے کہ پاک بھارت کرکٹ سیریز 2014 میں ہونے والے معاہدے کے تحت 2015 سے 2023 کے دوران 6 دو طرفہ سیریز کھیلنا تھیں تاہم بھارت بعدازاں معاہدے سے مکر گیا، پی سی بی کی جانب سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ بھارت 70 ملین ڈالر ہرجانہ ادا کرے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں