The news is by your side.

Advertisement

طلبا کے کلاس نہ لینے پر پروفیسرنے تنخواہ کے لاکھوں روپے واپس کردئیے

بہار: بھارت میں کالج پروفیسر نے طالب علموں کی عدم دلچسپی کے باعث اپنی تنخواہ کے لاکھوں روپے واپس کردیے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست بہارکے علاقے مظفرپور کے ایک سرکاری کالج  کے اسسٹنٹ پروفیسر للن کمار نے اپنی 33 ماہ کی تنخواہ جو تقریبا 24 لاکھ روپے بنتی ہے یونیورسٹی انتظامیہ کو یہ کہہ کر واپس کردی ہے کہ دو سال سے کسی طالبعلم نے ان کی کلاس ہی نہیں لی۔ اسسٹنٹ پروفیسر للن کمار نتیشور کالج میں ہندی زبان پڑھاتے ہیں۔

انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس پورے عرصے میں ایک بھی طالب علم ان سے پڑھنے نہیں آیا اس لئے میرا تنخواہ لینے کا کوئی جواز نہیں بنتا، میرا ضمیر اس بات کی اجازت نہیں دیتا کہ طلبا کو پڑھائے بغیر تنخواہ قبول کروں جس کے لیے مجھے رکھا گیا تھا، انہوں نے کہا کہ کرونا وبا کے دنوں میں بھی آن لائن کلاسز کے دوران میری کلاس میں چند طلبا ہوتے تھے۔

کالج پرنسپل نے پروفیسر کے اقدام پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ للن کمار کو یہ کرنے سے پہلے مجھ سے بات کرنی چاہیے تھی، انہوں نے کہا کہ للن کمار کا یہ محض پوسٹ گریجویٹ ڈپارٹمنٹ میں منتقلی کا ایک حربہ تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں