The news is by your side.

Advertisement

مولانا اور ق لیگ کے درمیان بی، سی اور کیو پلان کا ہمیں نہیں بتایا گیا، بلاول بھٹو

اسلام آباد: پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمان اور ق لیگ کے درمیان بی، سی اور کیو پلان کا ہمیں نہیں بتایا گیا۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین پیپللزپارٹی بلاول بھٹو نے اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پیپلزپارٹی نے مارچ سے متعلق اپنے وعدے پورے کیے ہیں لیکن مولانا اور رہبر کمیٹی نے پلان کے بارے میں ہمیں کچھ نہیں بتایا۔

انہوں ںے کہا کہ کراچی سے مارچ شروع ہوا تو پیپلزپارٹی رہنما ان کے ساتھ تھے لیکن آج کل مولانا فضل الرحمان ق لیگ سے رابطے میں ہیں۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ پیپلزپارٹی کے یوم تاسیس کا جلسہ آزاد کشمیر میں ہوگا، ہم اپنا لائحہ عمل پوری دنیا کے سامنے رکھیں گے، مقبوضہ کشمیر پر ایک تاریخی حملہ ہوا ہے، حکومت نے جو اقدام اٹھائے وہ آپ جانتے ہیں۔

مزید پڑھیں: بلاول بھٹو کی سماعت سے محروم افراد کے لیے اہم اقدام پر مبارک باد

چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ کشمیر کے لیے پیپلزپارٹی کی جدوجہد جاری رہے گی، آخری دم تک کشمیری بہن بھائیوں کے ساتھ رہیں گے، اس حکومت کے فیصلوں کا نقصان قوم اٹھا رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت آئی ایم ایف کے سامنے سرنڈر کرچکی ہے، حکومت کی ایک سال کی معاشی کارکردگی بدتر رہی ہے، مزدور، کسانوں، غریبوں کے حقوق کے لیے دائیں بازو کی جماعتیں خاموش ہیں۔

بلاول کا کہنا ہے کہ زرداری کا حق ہے وہ ذاتی معالج سے علاج کرائیں، سندھ کے مقدمات سندھ میں چلنے چاہئیں، تفریق منظور نہیں ہے، ہماری اپیلیں عدالتوں میں سنی نہیں جارہی ہیں، آصف زرداری کے ساتھ ناانصافی کی جارہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی کا ہمیشہ سے موقف رہا ہے کہ مسائل کا حل جمہوریت ہے، پیپلزپارٹی کا مطالبہ ہے کہ نئے الیکشن صاف و شفاف ہوں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں