The news is by your side.

Advertisement

ہم صرف ٹویٹ نہیں کرتے کام بھی کرتے ہیں: بلاول بھٹو زرداری

کراچی: پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ سندھ میں اسپیشل بچوں کے لیے جنوبی ایشیا کا سب سے بڑا آٹزم سینٹر ہے، ہم صرف ٹویٹ نہیں کرتے، کام بھی کرتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ اس قسم کی سہولتیں مہنگی ہوتی ہیں جو آٹزم سینٹر میں مفت دی جا رہی ہیں، ہم ایسے سینٹرز سندھ کے باقی شہروں میں بھی کھولیں گے، پاکستان پیپلز پارٹی کاعزم ہے غریبوں کو مفت علاج دینا ہے۔

بلاول بھٹو نے کہا ’حکومت کو مشورہ دیتا ہوں ہوش کے ناخن لے، ہم صرف ٹویٹ نہیں کرتے کام بھی کرتے ہیں، غیر جمہوری اقدام اٹھائیں گے تو آپ کا حال بھی مشرف جیسا ہوگا۔‘

ان کا کہنا تھا کہ قانون پر عمل درآمد کیا جاتا ہے تو نظام میں بہتری آتی ہے، نیب کو غیر سیاسی ادارہ ہونا چاہیے، احتساب کے نام پر انتقام ہوگا تو اس کے خلاف ہوں گے، نیب مشرف کا ادارہ ہے جو سیاسی انجینئرنگ کے لیے بنایا گیا ہے، اس میں اصلاحات کی ضرورت ہے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ قومی احتساب بیورو خود منی لانڈرنگ کا ادارہ ہے، نیب کی حراست میں لوگ مر رہے ہیں، یہ ایک قاتل ادارہ ہے، اس کے خلاف ایکشن لینا ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں:  حمزہ شہباز کس طرح منی لانڈرنگ کرتے رہے، نیب نے ثبوت حاصل کر لیا

انھوں نے کہا کہ حکومت جو الیکشن میں حاصل نہ کر سکی اب نیب سے حاصل کر رہی ہے، عوام کے حقوق چھینے جائیں گے تو پیپلز پارٹی اجازت نہیں دے گی، اٹھارویں ترمیم کو چھینا گیا تو ہم حکومت گرا دیں گے۔

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو نے کہا کہ ایسے نہیں چلے گا کہ نیب کو کچھ پیسے دے کر کالا پیسا سفید کر لو، جب تک ریفارمز نہیں لاتے کرپشن کا مقابلہ نہیں کر سکتے۔

بلاول کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی میں دم نہ ہوتا تو میرے اعلان پر وزیر اعظم ہاؤس نہ چیختا، جب پیپلز پارٹی نکلتی ہے تو بڑے بڑے تخت گر جاتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں