The news is by your side.

Advertisement

جنوبی پنجاب کو الگ صوبہ بنائیں گے‘ بلاول بھٹو

ملتان:پاکستان پیپلزپارٹی کےچیئرمین بلاول بھٹوزرداری نے جنوبی پنجاب کے شہر ملتان کوسیاسی مرکز بنانےکااعلان کرتے ہوئے کہا ہےکہ ’ہم سرائیکی سیکٹرکوالگ صوبہ بنائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹوزرداری نے ملتان کے بلاول ہاوس میں جاری ورکز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ پی پی مستقبل میں بھرپورسیاسی طاقت کا مظاہرہ کرے گی، ن لیگ اورپی ٹی آئی دونوں عوام دشمن پالیسیوں پرگامزن ہے۔

بلاول بھٹو نے کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ موجودہ حکومت نے ملک کو مسائل کے دلدل میں دھکیل دیا، پاکستان کو ان لٹیروں سےنجات دلائیں گے، ن لیگ نے جنوبی پنجاب کومحرومی کا شکاررکھا ہے، ہم سرائیکی بیلٹ کوالگ کرکے صوبہ بنایئں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ جنوبی پنجاب کی عوام نے ہمیشہ پیپلز پارٹی کا ساتھ دیا ہے، پاکستان میں اس وقت دائیں بازوکی سیاست ہورہی ہے، ن لیگ اورتحریک انصاف دونوں کی سیاست ایک ہے دونوں پارٹیاں عوام دشمن پالیسیوں پرگامزن ہیں۔

چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن کی حکومت میں متعدد قومی ادارے فروخت کیے ہیں اور اب یہ پی آئی اے کو فروخت کرنے جارہے ہیں جوکبھی دنیا کا نمبر1 ادارہ تھا۔

ان کا کہنا ہے کہ ہم نے بی آئی ایس پی پروگرام کے تحت 6 لاکھ خواتین کو مختلف شعبوں میں تربیت دے کرغربت سے نکالا ہے، انہوں نے کہا ہے کہ ’ہم نے 18 ویں ترمیم کی، این ایف سی ایوارڈ دیا، لیکن ن لیگ زراعت، ٹیکسٹائل، مینو فیکچرنگ سیکٹر کو تباہ کردیا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ جنوبی پنجاب کی عوام ہمارا ساتھ دے اور ممبر شپ مہم میں زیادہ سے زیادہ حصّہ لے، 2018 کے الیکشن قریب ہیں اس لیے میں سرائیکی سیکٹر میں زیادہ آؤں گا تاکہ جو لوگ ہم سے روہٹے ہوئے ہیں انہیں مناؤں، عوام میراساتھ دے تاکہ میں شہید بیظیربھٹو کے مشن کو پورا کرسکوں۔

دوسری جانب ورکز کنونشن کے بعد بلاول ہاوس ملتان میں چیئرمین بلاول بھٹوکی زیرصدارت پنجاب ایگزیکٹوکا اجلاس منعقد ہوگا ، جس میں آئندہ انتخابات میں جنوبی پنجاب سے امیدواروں سے متعلق مشاورت کی جائے گی، اجلاس میں سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی ، نیئربخاری اورشوکت بسرا ودیگررہنما بھی شریک ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں