The news is by your side.

Advertisement

لانگ مارچ سے قبل پیپلز پارٹی نے مطالبات پیش کردئیے

کراچی: پاکستان پیپلز پارٹی نے اپنے ‘ عوامی مارچ’ سے قبل حکومت کو مطالبات بھی پیش کردئیے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پیپلز پارٹی اب سے تھوڑ دیر بعد وفاقی حکومت کے خلاف مزار قائد سے لانگ مارچ کا آغاز کرنے جارہی ہے، جسے ‘عوامی مارچ ‘ کا نام دیا گیا ہے۔

مارچ کے آغاز سے قبل پیپلز پارٹی نے کم وبیش 38 مطالبات حکومت کے سامنے رکھ دئیے ہیں جو کہ درج ذیل ہیں۔

انیس سو تہتر کے آئین کے مطابق حکومت کے نظم و نسق پر عملدرآمد کیاجائے

ہر سطح پر آزادانہ انتخابات کے انعقاد کا مطالبہ

اداروں کی اپنی اپنی آ ئینی حدود میں رہ کر کارکردگی اور اختیارات کا مطالبہ

پارلیمنٹ،کمیٹی سسٹم میں استحکام اور پائیداری ہونی چاہئیے

اعلیٰ عدلیہ کےججز کی تقرری میں پارلیمانی کمیٹی کےکردار کا ازسر نو تعین

آزاد الیکشن کمیشن ، قانون کی حکمرانی اور آزاد عد لیہ ہونی چاہیے، پی پی کا مطالبہ

طلبا یونین سازی کا حق، طالبعلموں کی فلاح وبہبود کے امور میں فیصلہ ساز کردار

پرنٹ،الیکٹرانک میڈیامیں باضابطہ،غیراعلانیہ دونوں قسم کی سینسرشپ کاخاتمہ

میڈیا کمیشن رپورٹ کی سفارشات کے مطابق پیمرا کی آزادی کیلئےنئی قانون سازی

سائبرکرائم قانون کی تمام غیر منصفانہ اورجابرانہ دفعات کا خاتمہ

خواتین، اقلیتوں کیلئے منصفانہ اجرت پالیسی کیلئےمساوات کمیشن کا قیام

خواتین پر تشدد، تیزاب حملوں ،جنسی ہراساں کے قوانین پر لازمی عملدر آمد کامطالبہ

اقلیتوں کی جبری تبدیلی مذہب کی روک تھام کیلئےقانون سازی

اٹھارویں ترمیم، آئین کی دیگر شقوں کے تحت صوبائی حقوق کی گارنٹی دی جائے

بلوچ عوام کے  حقوق  کی  یقینی فراہمی ،فیصلہ سازی میں قومی اتفاق لایاجائے، مطالبہ

بلوچ رہنماؤں کو واپس لانے ،مرکزی سیاسی دھارے میں پر اتفاق رائے لایاجائے

آئین کے تحت تیل ،گیس کی پیداوار والےصوبوں کا ترجیحی حقوق مؤثربنایاجائے

پر تشدد انتہا پسندی کی بیخ کنی کیلئےنیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد کرایاجائے

جنوبی پنجاب کے نئے صوبے کا قیام ، نظر انداز علاقوں کی پسماندگی کاخاتمہ

جی بی اور آزادکشمیر کی مالیاتی خودمختاری ،تفویض کردہ مالی وسائل پر اختیار دیاجائے

مزدوروں کے لئے قابل گزارہ اجرت کی ادائیگی کا حق یقینی بنایاجائے

تمام مزدوروں کو سوشل سیکیورٹی کا تحفظ فراہم کیاجائے

زرعی اجناس کی قیمتوں، سبسڈی کیلئےایک نیا فریم ورک تشکیل دیاجائے

غریب کیلئےرہائش کی فراہمی کےحق ،جبری گھر سے بے دخلی کیخلاف قانون سازی کا مطالبہ

کچی آبادیوں،پسماندہ علاقوں کو ریگولرائز کرنے کیلئے قانونی فریم ورک کی تیاری کا مطالبہ

 

Comments

یہ بھی پڑھیں