The news is by your side.

Advertisement

’بٹ کوائن کی قیمت ایک لاکھ ڈالر تک پہنچ سکتی ہے‘

لندن: اسٹینڈرڈ چارٹرڈ بینک کا کہنا ہے کہ 2022 میں بِٹ کوائن کی قیمت ایک لاکھ ڈالر تک پہنچ سکتی ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسٹینڈرڈ چارٹرڈ بینک نے کہا ہے کہ اگلے برس کے اوائل میں ڈیجیٹل کرنسی بٹ کوائن کی قیمت ایک لاکھ ڈالر تک جا سکتی ہے، اور امکان ہے کہ اس کی قیمت ایک لاکھ 75 ہزار ڈالر تک بڑھ جائے گی۔

چارٹرڈ بینک کی نئی کرپٹو کرنسی ٹیم کے سربراہ جیوفرے کینڈرک نے کہا ہے کہ مستقبل میں بٹ کوائن ادائیگی کا سب سے بڑا ذریعہ بن سکتا ہے۔

انھوں نے کہا جو سائیکل چل رہا ہے اس کے مطابق بٹ کوائن رواں برس کے آخر میں یا 2022 کے شروع میں ایک لاکھ ڈالر تک جانے کی توقع ہے۔

بٹ کوائن کو سرکاری کرنسی بنانے والا دنیا کا پہلا ملک

واضح رہے کہ یورپ میں بدھ کو بٹ کوائن کی قیمت 46 ہزار 24 ڈالرز تھی، جب کہ دو دن قبل پیر کو یہ 52 ہزار ڈالرز تک پہنچ گئی تھی۔

یاد رہے کہ منگل کو ایل سلواڈور دنیا کا پہلا ملک بن گیا تھا، جس نے بٹ کوائن کو قانونی کرنسی کے طور پر تسلیم کیا، دنیا بھر میں ڈیجیٹل کرنسی یا کرپٹو کرنسی کو اپنانے کا رجحان بڑھتا جا رہا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں