25.2 C
Ashburn
بدھ, مئی 22, 2024
اشتہار

بی جے پی کی اتحادی جماعت کے کارندے ‌پر 400 سے زائد خواتین کی عصمت دری کرنے کا الزام

اشتہار

حیرت انگیز

بی جے پی کی اتحادی جماعت کے کارندے پراجول ریوانا پر 400 سے زائد خواتین کی عصمت دری کرنے کا الزام ہیں۔

مودی کے دور حکومت میں بھارتی سر زمین خواتین پرتنگ کر دی گئی، بی جے پی کے سائے تلے پلنے والے غنڈوں کا خواتین کے ساتھ ناروا سلوک کسی سے ڈھکا چھپانہیں، اقتدار کی ہوس اور طاقت کے نشے میں دھت مودی سرکار اپنی ہی خواتین کے لیے وبال جان بن گئی۔

بی جےپی کی اتحادی جماعت کےکارندےپراجول ریواناپر400سےزائدخواتین کی عصمت دری کرنےکاالزام ہیں۔

- Advertisement -

بھارتی جریدے کےمطابق پراجول ریوانا400خواتین کےساتھ جنسی زیادتی جیساسنگین جرم کرنےکےباوجودجرمنی فرارہوگیا۔

الجزیرہ کا کہنا ہے کہ ریاست کرناٹکامیں بی جےپی کی اتحادی جماعت کے ایک رکن پارلیمنٹ پر متعدد خواتین کے ساتھ جنسی زیادتی کاملوث ہے، جس سے عام انتخابات متنازعہ ہوگئے۔

پراجول ریواناپریہ الزام بھی عائدہےکہ اس نے خواتین کے ساتھ 2800 سے زائد بدسلوکی کی ویڈیوز کو بلیک میل کرنے کیلئے استعمال کیا۔

مبینہ زیادتی کا نشانہ بننےوالی بنگلورکی سابق کونسلر نے مقامی میڈیا کو بتایا کہ ریواناجو بھارت سے فرار ہوا ہے، اس نے مجھے مسلسل زیادتی کانشانہ بنایا۔

متاثرہ خاتون نےمودی پر الزام لگایاکہ مودی سرکار کو بارہا، اس کیس کے حوالے سے رپورٹ کیا گیا لیکن اس کے باوجود مودی نے کوئی ایکشن نہیں لیا۔

ایک اورمتاثرہ خاتون نےپراجول پر الزام لگایا کہ وہ 2 سال اسے زیادتی کا نشانہ بناتا رہا اور اسے قتل کرنے کی بھی دھمکیاں دیتارہا۔

راہول گاندھی نےمودی سرکارکااصل چہرہ بےنقاب کرتےہوئےکہا کہ بی جےپی پہلےسےان الزامات سےواقف تھی
یہ جنسی اسکینڈل نہیں ہےبلکہ اجتماعی عصمت دری ہےاور مودی سرکار نےاجتماعی زیادتی کرنےوالے کی حمایت کی ہے÷

کانگریس کی جنرل سیکٹری پرینکاگاندھی نےبھی خاموش رہنےپر بی جےپی اورمودی پرکڑی تنقیدکی اور کہا کہ اس گھناؤنےجرم میں سینکڑوں خواتین کی زندگیاں برباد ہوئیں کیا مودی جی آپ خاموش رہیں گے؟

مودی سرکارنے روایتی ہٹ دھرمی کا مظاہرہ کرتے ہوئے پراجول ریوانا سے لاتعلقی کا اظہار کرکے سوالات کا جواب دینے سے انکار کردیا ہے۔

Comments

اہم ترین

لئیق الرحمن
لئیق الرحمن
لئیق الرحمن دفاعی اور عسکری امور سے متعلق خبروں کے لئے اے آروائی نیوز کے نمائندہ خصوصی ہیں

مزید خبریں