The news is by your side.

Advertisement

مصر: صدارتی انتخابات سے قبل بم دھماکا، دو افراد جان بحق

قائرہ: مصر کے شہر اسکندریہ میں ایک بم دھماکے میں دو پولیس اہل کار ہلاک، تین  زخمی ہوگئے. یہ واقعہ صدارتی انتخابات کے لیے پولنگ سے دو روز قبل پیش آیا.

تفصیلات کے مطابق مصر کے دوسرے بڑے شہر  اسکندریہ میں‌ سیکیورٹی سربراہ کے قافلے پر بم حملہ ہوا ہے.  حملے میں‌ دو  افسر جاں بحق ہوگئے۔

مصری وزارت داخلہ کے اعلامیہ کے مطابق اسکندریہ کے علاقے رشدی میں مرکزی شاہ راہ پر نصب بم دھماکے سے پھٹ گیا. اس حملے کا نشانہ شہر کے سیکیورٹی چیف میجر مصطفیٰ النمر کا قافلہ تھا، البتہ وہ قافلے میں‌موجود نہ ہونے کی وجہ سے محفوظ رہے.

واقعے کے فوری بعد فوج اور پولیس نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا اور تفتیش شروع کر دی۔ چند افراد کو حراست میں لینے کی اطلاعات ہیں۔

واضح رہے کہ مصر میں صدارتی انتخابات 26 تا 28 مارچ منعقد ہوں‌ گے، جس میں‌ عبدالفتاح السیسی کی  جیت کی پیش گوئی کی جارہی ہے. السیسی کے مخالفین اسے جبر کے ماحول میں ہونے والے انتخابات قرار دے کر بائیکاٹ کا مطالبہ کر رہے ہیں.

ان مطالبات کا جواب دیتے ہوئے مصری صدر نے کہا تھا کہ حکومت کو چیلنج کرنے والوں‌ کو سنگین نتائج بھگتنے ہوں‌ گے، اب سات یا آٹھ سال پہلے والا دور  واپس نہیں آئے گا۔ ان کا اشارہ2011 میں حسنی مبارک کے خلاف عوامی احتجاج کی جانب تھا، جسے عرب بہار کا نام دیا گیا تھا.

یاد رہے کہ گذشتہ دنوں‌ القاعدہ کے سربراہ ڈاکٹر ایمن الظواہری کا سوشل میڈیا کے ذریعے ایک نیا ویڈیو پیغام سامنے آیا تھا، جس میں وہ مصر کی کالعدم جماعت اخوان المسلمون کا دفاع کرتے نظر آئے تھے. اخوان المسلمین سے تعلق رکھنے والے محمد مرسی کی حکومت کا جولائی 2013 میں تختہ الٹا دیا تھا.


القاعدہ کے سربراہ ڈاکٹر ایمن الظواہری اخوان المسلمون کے حق میں سامنے آگئے


اخوان المسلمون دہشت گرد تنظیم ہے، مصری حکومت


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں