The news is by your side.

Advertisement

یوکرین کی پارلیمنٹ میں ہنگامہ، مکے گھونسے چل گئے

کیو: یوکرین کے سیاست دان کو روسی صدر ولادی میر پیوٹن کا ایجنٹ کہنے پر یوکرین کی پارلیمنٹ میں ہنگامہ ہوگیا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق یوکرین کے سیاست دان کو روسی صدر ولادی میر پیوٹن کا ایجنٹ کہنے پر یوکرین کی پارلیمنٹ میں ہنگامہ ہوگیا، حکومت اور اپوزیشن کے اراکین نے ایک دوسرے پر مکوں کی بارش کردی۔

ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ایوان باکسنگ رنگ کا منظر پیش کررہا ہے، ہنگامہ آرائی اس وقت شروع ہوئی جب اپوزیشن کے ایک رکن نیسٹر شفریچ نے یوکرینی سیاست دان کو روسی صدر پیوٹن کا ایجنٹ بنا کر پیش کرنے والا پوسٹر پھاڑ ڈالا۔

پوسٹر پھاڑنے کے بعد پیپلز فرنٹ کے رکن یورپی بیریزا نے شفریچ پر حملہ کردیا، حکومت اور اپوزیشن کی جانب سے لڑائی جھگڑا کئی منٹ تک جاری رہا۔

رپورٹ کے مطابق گرجا گھر کا نام تبدیل کرنے کے لیے پارلیمنٹ کا اجلاس بلایا گیا تھا جو بعد میں اکھاڑے کا منظر پیش کرنے لگا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں