The news is by your side.

Advertisement

قائمہ کمیٹی اجلاس: پاک افغان تجارتی معاہدے پر بریفنگ

اسلام آباد: قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے تجارت کے اجلاس میں وزارت تجارت کے حکام کی جانب سے بتایا گیا کہ پاک افغان تجارت میں آپریشنل سائیڈ پر کچھ مسائل کا سامنا ہے، کافی حد تک مسائل حل ہوگئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق رکن قومی اسمبلی نوید قمر کی زیر صدارت قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے تجارت کا اجلاس ہوا، اجلاس میں پاک افغان تجارتی معاہدے کے حوالے سے وزارت تجارت حکام نے بریفنگ دی۔

وزارت حکام کا کہنا ہے کہ افغان سائیڈ سے 2 مذاکراتی دور ہوچکے ہیں، آخری دور میں طرفین نے اپنی اپنی ترامیم پیش کیں۔ پاک افغان تجارتی معاہدے کی مدت 11 فروری کو ختم ہورہی ہے۔

چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ 11 فروری کو معاہدہ ختم ہو رہا ہے، نئے معاہدے پر اتفاق نہیں ہوا جس پر وزارت کے حکام نے کہا کہ افغان وزیر تجارت نے مشیر تجارت کو خط لکھا ہے، معاہدے کو حتمی شکل دی جائے گی۔

حکام کا کہنا تھا کہ آپریشنل سائیڈ پر کچھ مسائل کا سامنا ہے، کافی حد تک مسائل حل ہوگئے ہیں۔ پاک افغان تجارتی معاہدے پر طرفین میں ڈیڈ لاک نہیں۔

بریفنگ میں بتایا گیا کہ پاکستان سے جانے والے کنٹینر سے ایک ہزار ڈالر فیس لی جاتی ہے، افغانستان کی جانب سے کہا گیا کہ ہمیں اس کی معلومات نہیں۔

چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ اجلاس میں پاک افغان تجارتی معاہدے پر بریفنگ دی جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں