The news is by your side.

Advertisement

2030 تک 60 فیصد بجلی اندرونی ملکی ذخائر سے بنےگی،عمر ایوب

اسلام آباد: وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب کا کہنا ہے کہ 2030 تک 60 فیصد بجلی اندرونی ملکی ذخائر سے بنےگی۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب نے نیوز کانفرنس میں کہا کہ آج انرجی سےمتعلق پالیسی منظور کی گئی ہے،2025 تک 20 فیصد بجلی قابل تجدیداور متبادل ذرائع سے حاصل کی جائےگی۔

عمر ایوب نے بتایا کہ قابل تجدید ذرائع سے بجلی کے حصول کے لیے بولی کا عمل ہو رہا ہے،سائنسدان اور انجینئرز ہوا سے بجلی پیدا کرنے کے آلات تیار کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ تھر کے کوئلے کے ذخائر بھی مجموعی طلب کے 10 فیصدتک بجلی حاصل کریں گے، 2030 تک60 فیصد بجلی اندرونی ملکی ذخائر سے بنےگی۔

وفاقی وزیر توانائی کا کہنا تھا کہ اس وقت بجلی باہر سے تیل وگیس منگوا کر بنائی جا رہی ہے،سستی بجلی سے صنعتوں اورگھریلو صارفین کو فائدہ ہوگا۔

نیوز کانفرنس کے دوران عمر ایوب کا کہنا تھا کہ سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کی مدد سے سولر سسٹم سے بجلی حاصل کریں گے،متبادل توانائی کے ذرائع سے روزگار بھی پیدا ہوگا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں