The news is by your side.

Advertisement

امریکی ریاست میں ڈکیتیوں‌ کا طوفان، 80 ڈاکوؤں کا ایک ساتھ سپر اسٹور پر دھاوا

کیلیفورنیا: امریکی ریاست کیلیفورنیا کے مختلف شہروں میں ڈکیتیوں‌ کا طوفان امڈ آیا، تین دن مسلسل بڑی ڈکیتیاں کی گئیں، ایک واردات میں 80 ڈاکوؤں نے ایک ساتھ ایک سپر اسٹور پر دھاوا بول کر اسے لوٹ لیا۔

تفصیلات کے مطابق ہفتے کو 80 افراد نے کیلیفورنیا کے نارڈسٹروم اسٹور پر دھاوا بول کر ایک منٹ میں سامان لوٹ لیا اور فرار ہو گئے، ڈاکوؤں نے تین ملازمین کو تشدد کا نشانہ بھی بنایا، اور مرچوں کا اسپرے کرنے کے بعد سامان اور پیسوں سے بھرے بیگ لے کر بھاگ گئے۔

یہ واقعہ وال نٹ کریک پر پیش آیا، لٹیروں نے شناخت چھپانے کے لیے ماسک پہن رکھے تھے، اور بھاگنے کے لیے متعدد گاڑیاں سڑک پر ان کا انتظار کر رہی تھیں، جنھوں نے سڑک پر ٹریفک بھی روک رکھا تھا۔

پولیس نے اس واقعے کو ‘واضح منظم واردات’ قرار دیا، اس سلسلے میں 3 مشتبہ افراد کو گرفتار بھی کیا گیا ہے، جن پر ڈکیتی، سازش، چوری، املاک پر قبضے اور اسلحے سمیت مختلف الزامات عائد کیے گئے ہیں۔

عینی شاہدین کا کہنا تھا کہ واردات کے دوران 25 سے زائد گاڑیوں نے سڑک کو بلاک کر رکھا تھا۔ اس ڈکیتی کی ویڈیو بھی سامنے آئی ہے جس میں لوٹ مار کرنے والے اپنی گاڑیوں میں داخل ہونے سے پہلے بیگ اور بکسوں کے ساتھ سڑک پر بھاگ رہے ہیں جن کے پاس چوری شدہ سامان موجود ہے۔

اس سے قبل جمعے کی رات کو لٹیروں نے سان فرانسسکو کے یونین اسکوائر میں لوئس ووٹن کی دکان میں توڑ پھوڑ کر کے واردات کی تھی اور زیورات چرائے تھے۔ پولیس کے مطابق لٹیروں کے کئی گروپس نے مضافاتی علاقے اور یونین اسکوائر میں لوئس ووٹن، بربیری اور بلومنگ ڈیل جیسے اسٹورز میں توڑ پھوڑ اور لوٹ مار کی، یہ سیاحوں میں مقبول شاپنگ ڈسٹرکٹ ہے جو چھٹیوں میں نکلنے والے خریداروں سے بھرا ہوا تھا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ اسی طرح کے مناظر اتوار کو ہیورڈ اور سان ہوزے کے شہروں میں بھی زیورات، چشموں اور کپڑوں کی دکانوں میں دہرائے گئے، جہاں لٹیروں نے بڑی تعداد میں اسٹورز میں داخل ہو کر لوٹ مار کی۔

واضح رہے کہ یہ ڈکیتیاں ایک ایسے وقت میں ہوئی ہیں جب امریکا کے بڑے شہروں میں پولیسنگ کے مستقبل کے بارے میں بھرپور بحث ہو رہی ہے۔ کیلیفورنیا کے گورنر نے اعلان کیا ہے کہ سان فرانسسکو بے کے پورے علاقے میں بڑے اسٹورز پر بڑے پیمانے پر ڈکیتیوں کی ایک سیریز کے بعد انتہائی ٹریفک والے شاپنگ مالز کے ارد گرد پولیس اہل کار اب زیادہ تعداد میں تعینات ہوں گے۔

کولیشن آف لا انفورسمنٹ اینڈ ریٹیل کے صدر بین ڈوگن نے کا کہنا ہے کہ ریٹیلرز کو منظم چوریوں کی وجہ سے ہر سال تقریباً 65 بلین ڈالر کا نقصان ہوتا ہے، اور ہجوم کی صورت میں ڈکیتیاں اب قومی رجحان کا حصہ بن گئی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں