The news is by your side.

Advertisement

کینیڈین کوہ پیما ’کے ٹو‘ کی چوٹی سر کرنے کے دوران ہلاک

کراچی : کینیڈین کوہ پیما دنیا کی دوسری بلند ترین چوٹی ’کے ٹو‘ سر کرنے کے دوران اونچائی سے گر کر جان کی بازی ہار گیا۔

تفصیلات کے مطابق براعظم امریکا کے ملک کینیڈا کا 53 سالہ کوہ پیما ’سرگ ڈیشرلوٹ‘ دنیا کی 8 ہزار 611 میٹر(28 ہزار 251 فٹ) اونچی دوسری بلند ترین چوٹی ’کے ٹو‘ کو سر کرنے کی کوشش کے دوران جان کی بازی ہار گیا۔

گلگت بلتستان کے محکمہ سیاحت کے ایک عہدیدار کا کہنا تھا کہ کینیڈین کوہ پیما کے ساتھ چوٹی پر کیمپ نمبر 2 اور 3 کے درمیان یہ افسوس ناک حادثہ پیش آیا ہے۔

کینیڈین کوہ کی چوٹی سر کرنے کے دوران ہلاکت کی تصدیق سیاحوں کے ٹرپ کا انتظار کرنے والی کمپنی ’سمٹ قراقرم‘ ترجمان سخاوت حسین نے کردی ہے۔

سیاحوں کے لیے ٹرپ کا انتظام کرنے والی کمپنی سمٹ قراقرم کے ترجمان سخاوت حسین نے بھی کینیڈین کوہ پیما کے ہلاک ہونے کی تصدیق کردی ہے۔

سمٹ قراقرم کمپنی کے ترجمان سخاوت حسین کا کہنا ہے کہ ’مجھے کینیڈین سیاح کے بلندی سے گر ہلاک ہونے کی خبر بیس کیمپ نے دی اور بتایا کہ کوہ پیما کے جسد خاکی کو جدید بیس کیمپ پہنچا دیا گیا ہے‘۔

سخاوت حسین نے خبر رساں اداروں کو بتایا کہ ’اونچائی سے گر کر ہلاک ہونے والا کوہ پیما اپنے اہل خانہ سے رابطے میں تھا‘۔

خیال رہے کہ ماؤنٹ ایورسٹ کے بعد پاکستان اور چین کی سرحد پر واقع دنیا کی بلند ترین چوٹی ’کے ٹو‘ ہے۔

یاد رہے کہ پہلی بار 1954 میں کے ٹو کو سر کیا گیا تھا، تاہم اب تک کے ٹو کو سر کرنے کی کوشش کرنے والے 80 کوہ پیما جان کی بازی ہار چکے ہیں۔ صرف 306 کوہ پیما ہی کے ٹو سر کرنے میں کامیاب ہوئے ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں