The news is by your side.

Advertisement

واجد ضیا نے پارلیمنٹ کو جھوٹا کہا ، طلال اور نہال کو نوٹس ہوسکتا ہے تو اسے کیوں نہیں، کیپٹن(ر) صفدر

اسلام آباد : کیپٹن(ر) صفدر کا کہنا ہے کہ واجد ضیا نے پارلیمنٹ کو جھوٹا کہا ، طلال اور نہال کو نوٹس ہوسکتا ہے تو اسے کیوں نہیں، ملک کونقصان پہنچانے والوں کو معاف کرنے سے اللہ ناراض ہوتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیر اعظم نواز شریف کے داماد کیپٹن(ر) صفدر نے احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاناما کیس کی تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی کے سربراہ پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اللہ ہی واجد ضیا کو معاف کرے تو کرے، واجد ضیا نے ایک غلط رپورٹ بدنیتی کی بنیاد پر دی ، واجد ضیا سےصرف دستخط لئے گئے،رپوٹ کہیں اور تیار ہوئی۔

کیپٹن(ر) صفدر کا کہنا تھا کہ کروڑعوام کو تباہی کے دہانےپرلاناریاست کیلئے خطرہ ہے،ملک کو نقصان پہنچانے والوں کو معاف کرنے سے اللہ ناراض ہوتا ہے۔

نواز شریف کے داماد نے کہا کہ جے آئی ٹی کی خود ساختہ رپورٹ پر کیس چلایا جا رہا ہے ، نیب کے قانون میں ویڈیولنک کےذریعےبیان کی گنجائش نہیں ، کیسے پتہ چلے گا بیان ریکارڈ کرانے والا واجد ضیا کا کزن ہی ہو، قطری شہزادے کا بیان ویڈیو لنک کےذریعے ریکارڈ نہیں کیا گیا تھا۔


مزید پڑھیں : سال 2018 کا الیکشن مسلم لیگ ن جیتے گی، کیپٹن(ر)صفدر


انکا کہنا تھا کہ واجد ضیا اکیلا نہیں ہے ،واجدضیا اینڈ کمپنی کہا جائے ، واجد ضیا نے پارلیمنٹ کو جھوٹا کہا ہے ، طلال چوہدری، نہال ہاشمی کو نوٹس ہوسکتا ہے تو اسے کیوں نہیں۔

انھوں نے مزید کہا کہ یہ کیس بہت پیچیدہ ہوگیا ہے ، اسمبلیاں چلنے دیں گے تو ہی کام ہوگا، جب تک سیاستدانوں کےہاتھ بندھےہیں ملک ترقی نہیں کرسکتا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں