The news is by your side.

Advertisement

کہیں کوئی خاموش قاتل آپ کی تاک میں تو نہیں، کون ہے یہ قاتل؟ آئیے جانتے ہیں

سانحہ مری نے ایک بار پھر پاکستان بھر کے لوگوں کے دل دکھا دیے ہیں، جب لوگ برف گرتی دیکھ کر ہنستے مسکراتے مری کی طرف عازم سفر ہوئے، تب موسم کی شدت میں ایک خاموش قاتل نے ان کے دمکتے چہروں سے زندگی کی رونق چھین لی۔

مری سانحے میں برف میں پھنس کر 22 بدقسمت افراد جانوں سے محروم ہوئے، آپ بھی اگر سرد علاقوں کی سیر کے لیے نکلنا چاہتے ہیں تو خبردار رہیں کہ کہیں کوئی خاموش قاتل آپ کی تاک میں بھی تو نہیں، کون ہے یہ خاموش قاتل، آئیے جانتے ہیں۔

آپ اب تک جان چکے ہوں گے کہ حکومت کی جانب سے مری میں ہونے والی اموات کی بنیادی وجہ کاربن مونو آکسائیڈ بتائی گئی۔

آپ سفر کر رہے ہیں؟ کسی سرد علاقے سے تو نہیں گزر رہے؟ ایسے راستے پر تو نہیں جہاں شدید سردی ہو؟ آپ کی گاڑی کے تمام شیشے بند ہوں؟ گاڑی میں ہیٹر چل رہا ہو؟ تو خبر دار ہو جائیں، ایک خاموش قاتل تاک میں ہے۔

یہ ایسا قاتل ہے جو نظر نہیں آتا، اس کی کوئی بو نہیں ہوتی، اور کوئی ذائقہ بھی نہیں ہوتا، بس ذرا سی لاپروائی ہوئی اور یہ قاتل وار کر جاتا ہے۔

آپ ٹھیک سمجھے، ہم بات کر رہے ہیں کاربن مونو آکسائیڈ کی، یہ ایک زہر ہے جو گاڑیوں کے ہیٹر سے پیدا ہوتی ہے، اور صرف چند منٹ آکسیجن نہ ملے تو اعصاب شل ہو جاتے ہیں اور زندگی چھن جاتی ہے۔

کنزیومر پروڈکٹس سیفٹی کمیشن کے مطابق امریکا میں ہر سال کاربن مونو آکسائڈ سے تقریباً 500 اموات ہوتی ہیں، اس لیے بہت زیادہ احتیاط کریں اور بیدار رہیں۔

اگر آپ کسی سرد علاقے میں پھنس جائیں تو کیا کریں؟ گاڑی کوگرم کرنے کے لیے ہیٹر بالکل نہ چلائیں، ہیٹر آن کرنے سے کاربن مونو آکسائیڈ پیدا ہوتی ہے، اور چند منٹ آکسیجن نہ ملے تو خاموش قاتل وار کر دیتا ہے۔

تو پھر کیا کریں؟

کسی کی مدد آنے تک گاڑی کو بند کر دیں، ایندھن بچائیں، ہیٹر نہ چلائیں، انسانی جان کی گرمی سے ہی گاڑی گرم رہے گی، اور گاڑی سڑک کنارے پارک کریں، ٹائر پر لوہے کی زنجیر لگا دیں۔

گاڑی سے تنہا بالکل باہر نہ نکلیں، باہر کے موسم کا پتا نہیں، سڑک پر پھنسنے سے گاڑی کے اندر بیٹھنا قدرے بہتر ہے۔

یاد رہے کہ مری میں برف کا طوفان سیاحوں کے لیے موت کا سامان بن گیا ہے، برف دیکھنے کی خواہش نے بائیس افراد کی جان لے لی ہے، اور مری میں اس وقت ایمرجنسی نافذ ہے، اور علاقے کو آفت زدہ قرار دیا گیا ہے۔

\

Comments

یہ بھی پڑھیں