site
stats
سندھ

سندھ کی جماعتوں نے مردم شماری کے نتائج مسترد کردیئے

کراچی : سندھ کی جماعتوں نے مردم شماری کے نتائج مسترد کردیئے، پی پی، ایم کیوایم، پی ایس پی اور قوم پرست جماعتیں یک زبان ہوگئیں۔ رہنماؤں کا کہنا ہے کہ اعداد وشمارغلط ہیں، دوبارہ مردم شماری کرائی جائے۔

تفصیلات کے مطابق ملک میں دو دہائیوں کے بعد ہونے والی مردم شماری کے نتائج پر پاکستان پیپلزپارٹی ایم کیو ایم پی ایس پی اور دیگر قوم پرست جماعتوں نے اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ نتائج پر یقین نہیں کیا جاسکتا۔

اس حوالے سے پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما نثارکھوڑو نے کہا کہ مردم شماری کے درست ہونے کا کوئی ثبوت نہیں، ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار کا کہنا ہے کہ کراچی کی آبادی تین کروڑسے کم نہیں ہے۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ مردم شماری میں کراچی اور سندھ کی آبادی کم کرکے دکھائی گئی، کراچی میں برمی، افغانی، ویت نامی سب ہی رہتے ہیں۔

چئیرمین مہاجر قومی موومنٹ آفاق احمد نے بھی اعداد و شمار کی رپورٹ کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ سندھ خصوصاً کراچی کی عوام کے ساتھ زیادتی کی گئی ہے۔

پاک سرزمین پارٹی کے رہنما انیس ایڈوکیٹ نے بھی رپورٹ کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ دیہی اور شہری سندھ کی آبادی کے اعداد و شمار پر وسائل کی تقسیم متنازعہ بنے گی۔


مزید پڑھیں: ملکی آبادی 20 کروڑ 77 لاکھ ہوگئی، مردم شماری کے نتائج 


 سندھ کے قوم پرست رہنما ایاز لطیف پلیجو کا کہنا ہے کہ اس طرح کے اعداد و شمار سندھ کے وسائل پر ڈاکہ مارنے کے مترادف ہیں۔

ایاز لطیف پلیجو سمیت تمام جماعتوں نے مطالبہ کیا ہے رپورٹ کو کالعدم قرار دے کر سندھ سمیت ملک بھر میں نئے سرے سے شفاف اور غیر جانبدارانہ مردم شماری کروائی جائے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top