The news is by your side.

Advertisement

‘اسمگلنگ روکنے کی وجہ سے آج پاکستان میں موبائل فونز بن رہے ہیں’

اسلام آباد : چیئرمین پی ٹی اے عامر عظیم باجوہ کا کہنا ہے کہ اسمگلنگ روکنے کی وجہ سے آج پاکستان میں موبائل فونز بن رہے ہیں ، سوشل میڈیا کمپنیوں سے درخواست کی قوانین کی پاسداری کریں۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین پی ٹی اے عامر عظیم باجوہ نے میڈیا بریفنگ دیتے ہوئے کہا ہے کہ اسپیکٹرم کی نیلامی میں پی ٹی اے کی ٹیم نے بہترین کام کیا، ڈیوائس بلاکنگ سسٹم سےپہلےغیرقانونی چینل سےزیادہ موبائل آرہےتھے لیکن اب پاکستان میں فیک موبل فون آنے کا چانس نہیں۔

چیئرمین پی ٹی اے کا کہنا تھا کہ اسمگلنگ روکنے کی وجہ سے آج پاکستان میں موبائل فونز بن رہے ہیں، سوشل میڈیا کیلئے کوئی انٹرنیشنل کنونشن نہیں ہے، دنیا میں سوشل میڈیا کو بہتر طریقے سے ریگولیٹ کی بات ہورہی ہے۔

عامر عظیم باجوہ نے کہا کہ پاکستان میں 103 سے 104 ملین انٹرنیٹ صارفین ہیں، سوشل میڈیا کمپنیوں سے درخواست کی قوانین کی پاسداری کریں، سوشل میڈیا قوانین پر نظرثانی ہورہی ہے، بھارت میں بھی سوشل میڈیا کمپنیوں نے مقامی قوانین کی پابندی شروع کردی جبکہ ڈارک ویب گلوبل چیلنج ہے۔

جعلی سمز کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ لوگوں کو لالچ دیکر تھم امپریشن لیے جاتے ہیں ، تھم امپریشنز کی مدد سے جعلی سمز ایشو کرائی جاتی ہیں ، پی ٹی اے نے جعلی سمز کیخلاف بڑے پیمانے پر ایکشن لیا، جعلی سمز کے استعمال میں 300 فیصد کمی آئی ہے۔

چیئرمین پی ٹی اے نے مزید کہا کہ ٹیرف جب بھی بڑھیں گے تو پی ٹی اے سے منظوری لی جائے گی، پاکستان میں کالز اور ڈیٹا کا ٹیرف ریجن سے کم ہے۔

اسپیکٹرم کی نیلام ست متعلق عامر عظیم باجوہ کا کہنا تھا کہ پی ٹی اے نے کبھی اسپیکٹرم مکمل نیلام کرنے کا دعویٰ نہیں کیا ، سپیکٹرم خریداری کے حوالے سے آپریٹرز کو مجبور نہیں کرسکتے، نیلامی میں بچ جانے والے سپیکٹرم کا فیصلہ بعد میں کریں گے، نئی نیلامی کیلئے حکومت کی اجازت چاہیے ہوتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں