The news is by your side.

Advertisement

پاکستان کے امپورٹرز، ایکسپورٹرز کے لیے اچھی خبر

کراچی: حکومت نے ملک کے بندرگاہوں کے چارجز کم کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت کی ہدایت پر کراچی پورٹ ٹرسٹ کے صدر دفتر میں منعقدہ اجلاس میں بندرگاہوں کے چارجز کم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، جس سے ملک کے درآمد اور برآمد کنندگان کو فائدہ ہوگا۔

وفاقی کی جانب سے بندرگاہوں کے نرخ ریشنلائز کرائے جانے کے حوالے سے اجلاس بلانے کی ہدایت کی گئی تھی، جس میں چیئرمین کے پی ٹی، چیئرمین پورٹ قاسم اتھارٹی، چیئرمین پاکستان نیشنل شپنگ کارپوریشن، سی ای او PICT خرم عزیز اور چیئرمین PSAA محمد راجپر نے شرکت کی۔

اجلاس میں پورٹ چارجز کو ریجن کی دیگر بندرگاہوں کے مساوی لانے پر غور کیا گیا، اور اس حوالے مختلف موجودہ ذرائع پر گفتگو کی گئی۔

میٹنگ میں شریک تمام ممبران اس امر متفق تھے کہ پورٹ کسٹمرز جو چارجز ادا کرتے ہیں، ان میں کمی لانی پڑے گی، انھوں نے اس پر اتفاق کیا کہ بندرگاہوں اور جہاز رانی سیکٹرز کے لیے اس معاملے کو یکساں طور پر دیکھنا ہوگا۔

یاد رہے کہ رواں برس کے پہلے مہینے کے پی ٹی حکام نے ایک رپورٹ میں کہا تھا کہ 4 ماہ میں درآمدی گندم کے 36 بحری جہاز کراچی پورٹ پر آئے، اور اس دوران 21 لاکھ میٹرک ٹن درآمدی گندم کی ہنڈلنگ کی گئی، گندم کے علاوہ 4 ماہ میں 2 کروڑ 75 لاکھ ٹن کارگو 13 جنوری تک ہینڈل کیا گیا، اور کےپی ٹی کے کارگو ہینڈلنگ میں 13 جنوری تک 19 فی صد اضافہ ہوا۔

واضح رہے کہ کراچی پورٹ ٹرسٹ کو سٹی اسٹیشن سے بذریعہ ریل نیٹ ورک جوڑنے کے منصوبے پر بھی کام جاری ہے، جس میں مختلف یارڈ، 12 لیول کراسنگ، 2 پل آ رہے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں