The news is by your side.

Advertisement

سندھ اسمبلی اجلاس میں چارپائی کیسے پہنچی؟

کراچی: اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی نے اجلاس میں چارپائی پہنچنے کی تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق آج سندھ اسمبلی اجلاس میں اپوزیشن اراکین کی جانب سے احتجاج کیا جا رہا تھا تو وہ اچانک چارپائی اور بستر لے آئے، جس نے اسمبلی کی کارروائی کو مذاق بنا دیا، اور جگ ہنسائی کا سبب بنا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق سندھ اسمبلی میں اپوزیشن کا احتجاج جاری تھا، کہ کچھ اراکین ایوان میں چارپائی اور بستر لے آئے، تاہم اسپیکر کی ہدایت پر سیکیورٹی عملے نے چارپائی کو باہر نکالا۔

اسپیکر نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس قسم کی حرکت اسمبلی کی بے حرمتی ہے، ملوث ارکان کے خلاف کارروائی ہوگی، تاہم اس دوران اپوزیشن ارکان ایوان میں شور شرابا اور نعرے بازی کرتے رہے۔

بعد ازاں، اسپیکر نے سیکریٹری سندھ اسمبلی کو واقعے کی تحقیقات کر کے انکوائری رپورٹ جمع کرانے کی ہدایت کر دی ہے، سندھ اسمبلی کی سیکیورٹی بھی بڑھانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

سیکریٹری سندھ اسمبلی عمر فاروق نے بتایا کہ وہ اجلاس کے دوران چارپائی لائے جانے کی انکوائری کر رہے ہیں، اسمبلی اسٹاف نے چارپائی اندر لے جانے سے روکنے کی بھرپور کوشش کی تھی، لیکن پی ٹی آئی اراکین زبردستی چارپائی اندر لے آئے۔

واضح رہے کہ آج سندھ اسمبلی اجلاس میں زبردست قسم کا شور شرابا ہوتا رہا، اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ کا کہنا تھا آج متفقہ قرارداد پیش نہیں کرنے دی گئی، پیپلز پارٹی نے جمہوریت کا جنازہ نکال دیا، فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ نہ وقت پر آڈٹ رپورٹ دی جاتی ہے نہ فنانشل رپورٹ، سندھ میں جمہوریت کا قتل نئی بات نہیں، یہ لوگ احتساب پر یقین نہیں رکھتے۔

جب کہ صوبائی وزیر مکیش کمار چاؤلہ نے کہا کہ پی ٹی آئی نے جمہوریت کا جنازہ نکالا، اس کی بات کریں، چینی اور گندم کی قیمتوں کا جنازہ نکالا، اس پر بات کریں، پورے ملک میں غریبوں کا جنازہ نکال دیا، یہ لوگ یہاں بیٹھے ہیں کچھ احساس کریں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں