The news is by your side.

Advertisement

برطانیہ: چیونگم بنانے والی کمپنیاں خطیر فنڈز دینے پر راضی ہو گئیں

لندن: چیونگم بنانے والی کمپنیاں برطانیہ کی سڑکوں سے چیونگم کے داغ صاف کرنے کے لیے 10 ملین پاؤنڈ کی رقم دینے پر راضی ہو گئی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق برطانیہ کی سڑکوں سے چیونگم ہٹانے کے لیے 2 ارب 28 کروڑ روپے سے زائد کے ایک بڑے منصوبے کا اعلان کیا گیا ہے، اس منصوبے کے لیے فنڈ چیونگم بنانے والی کمپنیاں فراہم کریں گی۔

دنیا بھر میں کروڑوں لوگ چیونگم چبانے کے عادی ہیں، تاہم لوگ اسے چبانے کے بعد عموماً ڈسٹ بن میں پھینکنا پسند نہیں کرتے، جو شہریوں سمیت انتظامیہ کے لیے بھی مشکل کھڑی کر دیتا ہے۔

اب برطانیہ نے اس مسئلے سے نمٹنے کے لیے ایک منصوبہ تشکیل دیا ہے، تین کمپنیاں جن میں مارس وریگلی، گلیکسو اسمتھ کلائن اور اطالوی کمپنی شامل ہے، اگلے پانچ سالوں میں لوگوں کو چیونگم کو سڑک کی بجائے ڈسٹ بن میں ڈالنے کی ترغیب دے گی، جس کے لیے 10 ملین پاؤنڈز کی رقم مختص کی گئی ہے۔

کمپنی کا دعویٰ ہے کہ اس سے یہ مسئلہ 64 فی صد تک کم کیا جا سکے گا، ایک رپورٹ کے مطابق برطانیہ میں ہر سال 7ملین پاؤنڈ کی رقم سڑکوں اور فٹ پاتھوں سے چیونگم ہٹانے میں لگائی جاتی ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ چیونگم کی وجہ سے ہر سال ٹیکس دہندگان کے لاکھوں پاؤنڈز ضائع ہو جاتے ہیں، اور انتظامیہ کے مطابق انگلینڈ کی تقریباً 87 فی صد سڑکیں چیونگم کے داغوں سے بھری ہوئی ہیں۔

برطانیہ میں کوڑا کرکٹ پھینکنا ایک مجرمانہ عمل ہے، اور مجرموں کو موقع پر 150 پاؤنڈ جرمانے کا سامنا کرنا پڑتا ہے، اور اگر عدالت میں مجرم قرار دیا جاتا ہے تو یہ جرمانہ 2500 پاؤنڈ تک بڑھ بھی سکتا ہے۔

یہ منصوبہ رواں سال کے اختتام تک شروع ہونے امکان ہے، جس کے ذریعے سڑکوں کو ازسرنو سنوارا جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں