The news is by your side.

Advertisement

‏’ہائی ٹیک سسٹم کی شمولیت سے خطرات سے نمٹنے میں مدد ملے گی‘‏

آرمی چیف جنرل قمر جاویدباجوہ نے آرمی ایئر ڈیفنس سینٹر کراچی کا دورہ کیا اور چینی ساختہ ایچ کیو 9 پی ‏ویپن سسٹم کی آرمی ایئرڈیفنس میں شمولیت کی تقریب میں شرکت کی۔ آرمی چیف نے کہا کہ ہائی ٹیک سسٹم ‏کی شمولیت سے درپیش خطرات سے نمٹنے میں مدد ملے گی، پاک فضائیہ اور آرمی ایئر ڈیفنس کے مابین ربط ‏سے ملکی دفاع ناقابل تسخیر ہوچکا ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ایئر ڈیفنس سینٹر کراچی کا دورہ کیا جہاں انہوں ‏نے چینی ساختہ ایچ کیو 9 پی ویپن سسٹم کی آرمی ایئرڈیفنس میں شمولیت کی تقریب میں شرکت کی، آرمی ‏چیف کو کمانڈر ایئرڈیفنس لیفٹیننٹ جنرل حمود الزمان نے ویپن سسٹم سے آگاہ کیا گیا۔

ہائی ٹو میڈیم ائیر ڈیفنس سسٹم ایچ کیو 9 پی ویپن سسٹم 100 کلومیٹر تک اپنے اہداف کو انگیج کر سکتا ہے، ‏آرمی ائیر ڈیفنس میں شامل کیا گیا ایچ کیو 9 پی ویپن سسٹم، جہاز، کروز میزائل اور بی وی آر ہتھیاروں سمیت ‏مختلف ٹارگٹس کو انگیج کرتا ہے، ایچ کیو 9 پی ویپن سسٹم سے پاکستان کا فضائی دفاع مزید ناقابل تسخیر ہو ‏گیا ہے۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے اس موقع پر کہا کہ ہائی ٹیک سسٹمز کی شمولیت سے ملکی ائیر ڈیفنس ‏صلاحیت میں اضافہ ہوگا اور وطن عزیز کو درپیش خطرات سے نمٹنے میں بہتر طور پر مدد ملے گی، ایئرڈیفنس ‏مجموعی دفاعی نظام میں خصوصی اہمیت کاحامل ہے۔

آرمی چیف کا کہنا تھا کہ پاک فضائیہ اور آرمی ایئر ڈیفنس کے مابین مثالی ربط سے ملکی دفاع ناقابل تسخیر ‏ہوچکا ہے، ایئر فورس اور آرمی ایئر ڈیفنس فضائی سرحدوں کے دفاع کیلئے مثالی کام کر رہے ہیں۔

آرمی چیف نے مزید کہا کہ پاک چین اسٹریٹیجک شراکت داری خطےمیں استحکام کا عنصر ہے، تقریب میں چینی ‏حکام نےبھی شرکت کی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں