The news is by your side.

Advertisement

بھارتی عدالت نے پانچ سالہ بچہ پاکستانی ماں کے حوالے کردیا

لاہور : گیارہ ماہ سے اپنے بیٹے کو دیکھنے کے لیے تڑپنے والی پاکستانی ماں کا انتظار ختم ہوگیا، بھارتی حکام نے پانچ سالہ افتخار کو ماں کے حوالے کردیا، واہگہ بارڈر پر جذباتی منظر دیکھ کر لوگوں کے دل بھر آئے۔

تفصیلات کے مطابق پانچ سالہ معصوم افتخار جب پاکستانی سرحد میں پہنچا اور اپنی ماں کے چہرے کو دیکھ کر اس کی خوشی کی انتہا نہ رہی جبکہ ماں کی آنکھیں بھی خوشی کے مارے نم ہو گئیں، فوجیوں کا ہاتھ تھامے نیلا ہُڈ پہنے پانچ سالہ افتخار واہگہ بارڈر سے پاکستانی حدود میں داخل ہوا۔

ماں نے لخت جگر کو دیکھتے ہی اپنی آغوش میں لے لیا، ننھا افتخار ماں کی گود میں بیٹھا لوگوں کو دیکھ کر شرماتا رہا۔

گزشتہ برس مارچ میں پانچ سالہ افتخار کو اس کا باپ اس کی ماں روبینہ سے جدا کرکے مقبوضہ کشمیر لے گیا تھا جس کے بعد پاکستان میں موجود والدہ نے بچے کی حوالگی کے لیے بھارتی عدالت میں مقدمہ دائر کیا۔

child-post-1

مئی دوہزار سولہ میں بچہ پاکستانی ثابت ہونے پر بھارتی عدالت نے ماں کے حق میں فیصلہ سنایا۔ بھارتی حکام کی سُست روی کے باعث معاملہ آٹھ ماہ تک لٹکا رہا جس کے بعد کیس میں پیش رفت ہوئی۔

child-post-2

پاکستانی ہائی کمیشن حکام کا کہنا ہے کہ ہم سرخرو ہو گئے ہیں، بچے کو جموں کشمیر سے امرتسر لا یا گیا جس کے بعد واہگہ پر ماں کے حوالے کردیا گیا۔ پانچ سالہ بچے کی واپسی کی خوشی ماں سے سنبھالے نہیں سنبھل رہی تھی۔

child-post-3

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں