The news is by your side.

Advertisement

ماحولیات: چین نے بڑا منصوبہ پیش کر دیا

بیجنگ: زمین پر ماحولیات کے تحفظ کے لیے چین نے ایک بڑا منصوبہ پیش کر دیا ہے، چین بہت بڑی مقدار میں ٹھوس فضلے کو قابل استعمال بنانے کے لیے بہ طور نمونہ 50 مراکز تعمیر کر رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق چین کے اعلیٰ اقتصادی منصوبہ ساز ادارے نے جمعرات کو سبز انقلاب کے منصوبے کی طرف پیش رفت کرتے ہوئے بڑی مقدار میں ٹھوس کچرے کو جامع طور پر قابل استعمال بنانے کے لیے 2025 تک بہ طور نمونہ 50 مراکز تعمیر کرے گا۔

چین کے قومی ترقی اور اصلاحات کمیشن کا کہنا ہے کہ ان مراکز میں ٹھوس کچرے کے استعمال کی شرح 75 فی صد سے زیادہ ہوگی، اس سلسلے میں ہدف کی تکمیل کے لیے پچاس ادارے مرکزی کردار ادا کریں گے۔

اس ٹھوس فضلے میں فاضل کوئلہ (کول گینگ)، دھاتوں کا کچرا، تعمیراتی کچرا، اور فصل کا بھوسہ شامل ہیں، یہ مراکز کاربن کے اخراج کو کم کرنے اور قدرتی معدنی وسائل کے استعمال میں مدد فراہم کریں گے۔

کمیشن کا کہنا ہے کہ چین کا عزم ہے کہ 2025 تک نئے شامل کیے گئے بلک سولڈ ویسٹ کے 60 فی صد استعمال کا ہدف حاصل کیا جائے۔

خیال رہے کہ چین نے اعلان کیا تھا کہ وہ 2030 تک کاربن ڈائی آکسائیڈ کے اخراج کی سطح کو کم سے کم کرنے اور 2060 تک کاربن کو مکمل طور پر بے ضرر اور ما حول دوست بنانے کے لیے کوششیں کرے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں