چین کی فضائی آلودگی ہر روز 4 ہزار افراد کی قاتل -
The news is by your side.

Advertisement

چین کی فضائی آلودگی ہر روز 4 ہزار افراد کی قاتل

واشنگٹن: امریکا میں کیے جانے والے ایک سروے سے معلوم ہوا کہ چین کی فضائی آلودگی ہر روز 4 ہزار افراد کی موت کا سبب بن رہی ہے۔

یونیورسٹی آف کیلی فورنیا میں کی جانے والی تحقیق میں بتایا گیا کہ چین میں ہر سال 16 لاکھ اموات آلودگی کے باعث پیدا ہونے والے امراض قلب، پھیپھڑوں کے امراض اور فالج کے باعث ہوتی ہیں۔

واضح رہے کہ چین میں کوئلے کا استعمال توانائی کے حصول کا اہم ذریعہ ہے اور یہی چین کی فضا کو جان لیوا حد تک آلودہ کرنے کا سبب بھی ہے۔

مزید پڑھیں: بدترین فضائی آلودگی کا شکار 10 ممالک

تحقیق کے سربراہ رابرٹ رہوڈ کے مطابق چین کی 38 فیصد آبادی اپنی زندگی کا بیشتر حصہ اس فضا میں گزار رہی ہے جسے عالمی معیارات کے تحت غیر صحت مند قرار دیا جا چکا ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ چین کی فضائی آلودگی میں سردی کے موسم میں خطرناک حد تک اضافہ ہوجاتا ہے کیونکہ حرارت کے حصول کے لیے بڑے اور چھوٹے پیمانے پر کوئلے ہی کو جلایا جاتا ہے۔

دوسری جانب عالمی ادارہ صحت کے مطابق فضائی آلودگی کے باعث ہر سال 5.5 ملین لوگ ہلاک ہوجاتے ہیں۔

اس سے قبل بھی کئی بار فضائی آلودگی کے انسانی صحت پر خطرناک اثرات کے بارے میں آگاہ کیا جاچکا ہے۔

اس سے قبل ایک تحقیق میں بتایا گیا تھا کہ فضائی آلودگی انسانی دماغ پر اثر انداز ہوتی ہے اور یہ مختلف دماغی بیماریوں جیسے الزائمر وغیرہ کا سبب بن سکتی ہے۔ ریسرچ کے مطابق ایک دماغی اسکین میں فضا میں موجود آلودہ ذرات دماغ کے ٹشوز میں پائے گئے تھے۔

ایک اور تحقیق کے مطابق فضائی آلودگی ان لوگوں پر خاص طور پر منفی اثرات ڈالتی ہے جو کھلی فضا میں کام کرتے ہیں جیسے مزدور اور کسان وغیرہ۔ ماہرین کے مطابق یہ کھلی فضا میں کام کرنے والے افراد کی استعداد کو متاثر کرتی ہے جس کے نتیجے میں ان کی کارکردگی میں کمی واقع ہوجاتی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں