The news is by your side.

Advertisement

خاص درجہ حرارت پر چلنے والی تیز رفتار ٹرین متعارف

بیجنگ: چین نے ٹرین سازی میں ایک اور سنگ میل عبور کرلیا ہے۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق چین کی ٹرین ساز کمپنی سی آر آر سی ٹانگ شان کمپنی لمیٹڈ نے حال ہی میں ایک نئی قسم کی تیز رفتار ٹرین تیار کی ہے جو مختلف ریل سسٹمز پر تیز رفتاری کے ساتھ چل سکتی ہے۔

کمپنی کے مطابق چار سو کلومیٹر فی گھنٹہ رفتار سے چلنے والی اس ٹرین کو بین الاقوامی روٹس پر ریل کے مختلف سسٹمز کے مطابق تیار کیا گیا ہے، جس سے ریل کا بین الاقوامی سفر زیادہ آسان ہوگیا ہے۔

کمپنی کا کہنا ہے کہ ٹرین منفی 25 ڈگری سینٹی گریڈ اور 50 ڈگری سینٹی گریڈ کے درمیان درجہ حرارت میں چل سکتی ہے۔میڈیا رپورٹ کے مطابق اس وقت دنیا بھر میں ریلوے ٹریک کے چار اہم معیارات ہیں، جب عام ٹرینیں مختلف گیج رکھنے والے ممالک کے درمیان چلتی ہیں تو انہیں اپنی ٹرین کی بوگیوں کو تبدیل کرنے کی ضرورت ہوتی ہے، جس میں وقت اور محنت کی ضرورت ہوتی ہے۔

چونکہ نئی سی آر آر سی ٹرین گیج بدلنے والی بوگیوں سے لیس ہے، اس لئے یہ سرحد پار سفر کے دوران اپنے ریل موڈ کو تبدیل کرسکتی ہے، جس سے ریل سسٹمز میں سفر کی استعداد میں بہت زیادہ اضافہ ہوسکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   بلٹ ٹرین نے تیز رفتاری کا ایک اور ریکارڈ بنا ڈالا

گذشتہ ماہ چین کے صوبے ہوبے کے شہر ووہان میں ڈرائیور کے بغیر چلنے والے اسکائی ٹرین کی آزمائش کا کامیاب تجربہ کیا گیا، رپورٹ کے مطابق ٹرین سروس کے آپریشن کا آغاز آئندہ برس سے شروع ہونے کا امکان ہے۔

چائنا ڈیلی کی رپورٹ کے مطابق چین میں مقامی انجینئرزنے ’مونو ریل‘ گاڑی تیار کی جسے ’اسکائی ٹرینُ کے نام سے بھی جانا جاتا ہے، ہوا میں لٹکی ہوئی پٹریوں پر چلنے والی اسکائی ٹرین 70 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے دوڑنے کی صلاحیت رکھتی ہے، ٹرین میں 510 افراد کے بیٹھنے کی گنجائش موجود ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں