The news is by your side.

Advertisement

چین نے مقامی طور پر تیار کردہ پہلا بحری بیڑا سمندر میں اتار دیا

بیجنگ: چین نےاپنی بڑھتی ہوئی فوجی طاقت کا مظاہرہ کرتے ہوئےملک میں تیار کیا جانے والا طیارہ بردار بحری جہاز پانی میں اتار دیا ہے۔

تفصیلات کےمطابق بحری بیڑے کو سمندر میں اتارنے کی تقریب بحیرہ بوہائی کی بندرگاہ ڈالیان میں منعقد کی گئی جس میں وائس چیئرمین سینٹرل ملٹری کمیشن چین بحریہ سمیت دیگراعلیٰ حکام نےتقریب میں شرکت کی۔

چین کے سرکاری میڈیا نے عسکری ماہرین کے حوالے سے بتایا کہ یہ طیارہ بردار بحری بیڑے کی تعمیر 2013 میں شروع ہوئی تھی جبکہ 2012 میں روس کا تیار کردہ بحری بیڑا چین کی بحریہ کا حصہ بنا تھا۔

بحری بیڑہ 50 ہزار ٹن وزن اٹھانے کی صلاحیت رکھتا ہےجس میں ایک وقت میں 36 جہاز کھڑے ہو سکتے ہیں۔

چینی حکام کا یہ بھی کہنا تھا کہ نیا بحری بیڑہ جوہری توانائی کے بجائے توانائی کے روایتی ذرائع سے چلایا جائے گا۔

امریکہ شمالی کوریا کے میزائل خطرے سے نمٹنے کے لیےتیار

واضح رہےکہ چین کی سرکاری خبر رساں ایجنسی شنہوا کی رپورٹ کے مطابق ایئرکرافٹ کیریئر مکمل طور پر تیار ہے اور اس کے پروپلژن، پاور اور دیگر اہم سسٹمز نصب کیے گئے ہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں