The news is by your side.

Advertisement

چین نے مریخ کی نئی تصویر جاری کر دی

بیجنگ: چین نے تیان وین -1 سے لی گئی مریخ کی نئی تصویر جاری کر دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پیر کو چین کے قومی خلائی انتظامی ادارے (سی این ایس اے) نے مریخ کے تحقیقی مشن تیان وین -1 کے ذریعے لی گئی نئی تصویر جاری کی ہے۔

اس تصویر میں ملک کے پہلی مریخ گاڑی اور سرخ سیارے کی سطح پر اس کے لینڈنگ پلیٹ فارم کو دکھایا گیا ہے، یہ تصویر تیان وین -1 کے آربیٹر پر نصب ہائی ریزولوشن کیمرے سے 2 جون کو شام 6 بجے (بیجنگ ٹائم) لی گئی۔

تصویر میں دائیں کونے میں 2 روشن مقامات دکھائی دے رہے ہیں، جن کے متعلق سی این ایس اے کا کہنا ہے کہ ان میں سے بڑا مقام لینڈنگ پلیٹ فارم ہے، جب کہ چھوٹا ژھورونگ روور ہے۔

یاد رہے کہ آربیٹر، لینڈر اور روور پر مشتمل چینی تیان وین -1 تحقیقی مشن 23 جولائی 2020 کو مریخ کی جانب بھیجا گیا تھا، 15 مئی کو روور لے جانے والا لینڈر مریخ کے شمالی نصف کرہ کے ایک وسیع میدان یوٹوپیا پلینیٹیا کے جنوبی حصے پر اتر گیا تھا۔

22 مئی کو روور ژھورونگ اپنے لینڈنگ پلیٹ فارم سے مریخ کی سطح پر اتر گیا تھا، جہاں اس نے سرخ سیارے پر اپنے تحقیقی کام کا آغاز کیا، اس کے ساتھ ہی چین مریخ کی سطح پر روور اتارنے اور آپریٹ کرنے والا امریکا کے بعد دوسرا ملک بن گیا تھا۔

چین نے نیا سیٹلائٹ خلا میں بھیج دیا

چینی میڈیا کے مطابق چینی تحقیقاتی خلائی گاڑی مریخ کی سطح پر حالات کا جائزہ لے گی، مریخ کی سطح کے نیچے پانی اور زندگی کے امکانات تلاش کیے جائیں گے۔ شمسی توانائی سے چلنے والی ژھورونگ اپنی 90 دن کی کھوج کے دوران قدیم زندگی کی علامتوں کی تلاش کرے گی، جس میں زمین میں ریڈار داخل کر کے کسی بھی سطح پر پانی اور برف کی تلاش بھی شامل ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں