The news is by your side.

Advertisement

اموات میں اضافہ، پاکستان میں کورونا کے مریضوں پر ملیریا کی دوا کلوروکوئین کا استعمال بند

لاہور : کورونا کے مریضوں پر ملیریا سے بچاؤ اور علاج کے لیے استعمال ہونے والی دوا کلوروکوئین کااستعمال بندکردیاگیا، ایڈوائزری گروپ ممبر کا کہنا ہے کہ ہائیڈروکسی کلوروکوئین کے استعمال سے اموات کی شرح  بڑھ رہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق کورونا ایکسپرٹ ایڈوائزری گروپ کوروناکےمریضوں پر ملیریا سے بچاؤ کی دوا کوروکوئین کا استعمال فوری بند کرنے کا فیصلہ کرلیا، ایڈوائزری گروپ ممبر کا کہنا ہے کہ ہائیڈروکسی کلوروکوئین کےاستعمال سےڈیتھ ریٹ بڑھ رہاہے، صحت مند مریضوں کا کلوروکوئین کااستعمال کرنا زندگیوں کو خطرہ میں ڈالنا ہے۔

پروفیسرثاقب نے کہا کہ کلوروکوئین ،ہائیڈروکسی کلوروکوئین سے دل کی دھڑکن بے ترتیب ہورہی ہے، پہلی اسٹڈی میں کلوروکوئین کےاستعمال کے فائدہ مند اثرات تھے۔

دوسری جانب کوروناایکسپرٹ ایڈوائزری گروپ کا اجلاس آج ہوگا ، جس میں کورونامریضوں کاہوم آئسولیشن کا حتمی فیصلہ کیا جائے گا، ممبرسیاگ کا کہنا ہے کہ ہوم آئسولیشن کیلئے ہوم آئسولیشن گائیڈ لائنزبنادی گئی ہیں، چھوٹے ،تنگ گھر میں رہنے والے افراد کو ہوم آئسولیشن کی اجازت نہیں ملے گی۔

ایڈوائزری گروپ ممبر نے کہا تھا کہ ہوم آئسولیشین کےمریض کوایپلی کیشن کےذریعےجیو ٹیگنگ کی جائےگی، کورونا کے 80فیصدمریضوں کو علاج کی ضرورت نہیں ہے جبکہ 100میں سے 3لوگوں کووینٹی لیٹرز پر جانے کی ضرورت ہوتی ہے۔

ثاقب سعید نے کہا کہ آئسولیشن کیلئے گھر میں علیحدہ کمرہ، اٹیج باتھ روم ،کئیرٹیکر کا ہوناضروری ہے، ضعلی انتظامیہ و ڈسٹرکٹ ہیلتھ ہوم آئسولیشن سے پہلے گھرکاجائزہ لے گی ، ہوم آئسولیشن کی گائیڈلائنزپرعمل نہ کرنیوالےکو قرنطینہ منتقل کر دیا جائے گا تاہم 15فیصدمریضوں کودرمیانی بیماری میں داخل ہونے کی ضرورت ہوتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں