site
stats
اہم ترین

مسیحی برادری آج ایسٹرکاتہوارمنارہی ہے

کراچی : دنیابھرکی طرح پاکستان میں بھی مسیحی برادری آج ایسٹرکا تہوار منا رہی ہے, صدراور وزیراعظم نےمسیحی براردی کوایسٹرکی مبارکباد دیتے ہوئے نیک خواہشات کااظہار کیا۔

ملک بھر میں ایسٹر کا آغاز گرجا گھروں میں امن و سلامتی کی دعاؤں کےساتھ ہوا۔ مسیحی برادری نےایسٹرکیلئےخصوصی عبادات کااہتمام کیا۔

اس موقع پرگرجا گھروں میں شمعیں روشن کی گئیں اورخصوصی گیت بھی گائےگئے۔

مسیحی تہوار کے موقع پر اہم ترین مذہبی تقریبات مشرق وسطیٰ میں یروشلم اورکیتھولک عیسائی عقیدے کے مرکز ویٹی کن میں منعقد ہوں گی۔

گرجا گھروں میں سخت سیکیورٹی انتظامات بھی کیےگئےہیں۔ صدرممنون حسین نےمسیحی برادری کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ پاکستانی آئین اقلیتوں کےحقوق کےتحفظ کی ضمانت دیتاہے۔

وزیر اعظم نوازشریف کا کہنا تھا کہ ملکی ترقی میں مسیحی برادری سمیت تمام اقلیتوں کا کردارلائق تحسین ہے۔

عیسائیوں کا سب سے بڑا تہوار جوکہ ان کے مطابق حضرت عیسیٰ علیہ السلام کے زندہ ہونے کی یاد میں منایا جاتا ہے۔ مدتوں‌ اس کی تاریخ انعقاد میں اختلاف رہا۔

325ء میں رومی بادشاہ، قسطنطین اول نے ایشائے کوچک (ترکی) کے مقام پرازنک میں عیسائی علما کی ایک کونسل بلائی جسے نائسیا کی پہلی کونسل کہتے ہیں۔ لیکن یہ کونسل بھی ، مشرقی اور مغربی کیلنڈوں ‌میں اختلاف کے باعث کوئی متفقہ تاریخ مقرر نہ کرسکی۔

آرتھوڈاکس ایسٹرن چرچ ایسٹرکی تاریخ کا تعین جولین کیلنڈر سے کرتا ہے۔ مغربی ممالک میں یہ تہوار 22 مارچ سے 25 اپریل تک کسی اتوار کو منایا جاتا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top