The news is by your side.

Advertisement

کروناوائرس کا مریض کہہ کر شہریوں نے طالب علم پر حملہ کردیا

لندن: برطانیہ میں کروناوائرس کے پھیلنے سے شہریوں میں شدید غم وغصہ بھی پایا جاتا ہے، ملک میں چینی شہریوں سمیت دیگر غیرملکیوں پر حملے کے واقعات سامنے آرہے ہیں۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق برطانوی شہر آکسفورڈ میں 22 سالہ سنگاپور کے طالب علم کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا گیا جس کے باعث اس کے چہری پر گہرے زخم آئے اور نازک ہڈیاں بھی ٹوٹ گئیں۔

حملے کے دوران مشتعل گروہ نے طالب علم کو مغلظات بھی بکیں۔ ہجوم میں موجود شہری تشدد کے دوران چیخ رہے تھے کہ ’ہمیں اپنے ملک میں کروناوائرس نہیں چاہیئے، چلے جاؤں یہاں سے‘۔

اس سے قبل برمنگھم میں بھی ایک غیرملکی خاتون کو ہراساں کرنے کی کوشش کی گئی۔ اس دوران غصیلے شہریوں کا کہنا تھا کہ ’تم لوگ فوراً اپنے ملک واپس چلے جاؤ، یہاں مہلک وائرس نہ پھیلاؤ‘۔ ایک شخص نے خاتون کو مکے بھی مارے۔

کورونا وائس سے نٹمنے کیلیے برطانوی فوج کو طلب کیے جانے کا امکان

واضح رہے کہ دنیا بھر میں پھیلنے والا ہلاکت خیز کورونا وائرس برطانیہ سمیت 60 ممالک تک پہنچ چکا ہے، بربرطانیہ میں کورونا کے 39 مریض سامنے آ چکے ہیں جن کا علاج جاری ہے۔

جبکہ کرونا وائرس کے پیش نظر برطانوی حکومت نے منصوبہ بندی مکمل کرتے ہوئے وبا سے نمٹنے کیلیے فوج طلب کرنے کا عندیہ بھی دیا ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں