ماتحت عدلیہ کے تمام فیصلے اب انٹر نیٹ پر دستیاب ہوں گے -
The news is by your side.

Advertisement

ماتحت عدلیہ کے تمام فیصلے اب انٹر نیٹ پر دستیاب ہوں گے

لاہور: چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ نے سائلین کی سہولت کے لیے بڑا فیصلہ کر لیا، سائلین کو ماتحت عدلیہ کے تمام فیصلے اب انٹرنیٹ پر دستیاب ہوں گے۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ محمد انوار الحق نے ماتحت عدلیہ کے تمام فیصلوں کو انٹرنیٹ پر اَپ لوڈ کرنے کا فیصلہ کر لیا، جس کے بعد سائلین کو تمام فیصلے انٹرنیٹ پر دستیاب ہوں گے۔

ماتحت عدالتوں کے ججز کو عدالتی فیصلے ویب سائٹ پر اَپ لوڈ کرنے کا حکم

چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ نے پنجاب بھر کی ماتحت عدالتوں کے ججز کو عدالتی فیصلے ویب سائٹ پر اَپ لوڈ کرنے کا حکم دے دیا۔

اس سلسلے میں ہائی کورٹ کی جانب سے صوبے بھر کے سیشن ججز کو مراسلہ بھجوا دیا گیا، جس میں کہا گیا ہے کہ ’ماتحت عدلیہ کے ججز جو فیصلہ دیں اسے فوری اَپ لوڈ کیا جائے۔‘

چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ نے مراسلے میں حکم دیا ہے کہ فیصلے 30 دن تک ویب سائٹ پر موجود رہیں، ڈسٹرکٹ کے ایڈمن ججز ہفتہ وار رپورٹ ہائی کورٹ بھجوائیں۔


یہ بھی پڑھیں:  سپریم کورٹ نے پاکستانی چینلز پر بھارتی مواد نشرکرنے پر پابندی لگادی


خیال رہے کہ جسٹس محمد انوار الحق نے بہ طورِ چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ عہدے کا حلف تین روز قبل اٹھایا ہے، گورنر پنجاب چودھری محمد سرور نے ان سے حلف لیا۔

چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ نے وی آئی پی موومنٹ کے دوران روٹ کلچر کے خاتمے کے لیے بھی اہم اقدام اٹھایا، اوردورانِ سفر کسی بھی قسم کا روٹ لگانے اور پروٹوکول لینے سے منع کر دیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں