چیف جسٹس اور چیئرمین نیب نے اساتذہ کو ہتھکڑی لگانے کا نوٹس لے لیا -
The news is by your side.

Advertisement

چیف جسٹس اور چیئرمین نیب نے اساتذہ کو ہتھکڑی لگانے کا نوٹس لے لیا

اسلام آباد: چیف جسٹس پاکستان اور چیئرمین نیب نے وائس چانسلر اور پروفیسرز کو ہتھکڑیاں لگا کر عدالت میں پیش کرنے کا سخت نوٹس لے لیا۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے پنجاب یونی ورسٹی کے سابق وائس چانسلر ڈاکٹر مجاہد کامران اور پروفیسرز کو ہتھکڑیاں لگا کر عدالت میں پیش کرنے پر نوٹس لے لیا۔

واضح احکامات کے باوجود اساتذہ کو ہتھکڑیاں کیوں لگائی گئیں: چیئرمین نیب

چیف جسٹس نے ڈی جی نیب لاہور اور ڈی آئی جی آپریشنز لاہور کو کل طلب کر لیا ہے، چیف جسٹس نے متعلقہ حکام کو کل سپریم کورٹ رجسٹری میں پیش ہونے کی ہدایت کر دی۔

دریں اثنا چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے بھی اساتذہ کو ہتھکڑی لگا کر عدالت میں پیش کرنے کا سخت نوٹس لے لیا، چیئرمین نیب نے ڈی جی لاہور کو فوری انکوائری کا بھی حکم جاری کر دیا۔


یہ بھی پڑھیں:  پنجاب یونی ورسٹی میں غیر قانونی بھرتیاں، سابق وی سی سمیت 6 ملزمان گرفتار


چیئرمین نیب نے کہا کہ واضح احکامات کے باوجود اساتذہ کو ہتھکڑیاں کیوں لگائی گئیں، ذمہ داران کے خلاف 3 دن میں قانون کے مطابق کارروائی کی جائے، نیب ہیڈ کوارٹر کو بھی ذمہ داروں کے خلاف انضباطی کارروائی سے آگاہ کیا جائے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز قومی احتساب بیورو (نیب) نے غیر قانونی بھرتیوں کے الزام میں پنجاب یونی ورسٹی کے سابق وی سی مجاہد کامران اور رجسٹرار سمیت 6 ملزمان کو گرفتار کر کے ہتھکڑیاں لگا کر احتساب عدالت میں پیش کیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں