site
stats
سائنس اور ٹیکنالوجی

کلائمٹ چینج کے باعث امریکی فوجی اڈے خطرے کی زد میں

واشنگٹن: حال ہی میں جاری کی جانے والی ایک رپورٹ کے مطابق موسمیاتی تغیر یا کلائمٹ چینج کے باعث امریکا کے مشرقی ساحل پر قائم فوجی اڈوں کو تباہی کا سخت خطرہ لاحق ہے۔

ایک غیر سرکاری تنظیم یونین آف کنسرنڈ سائنٹسٹ نے امریکی ساحلوں پر قائم 18 فوجی اڈوں کا تجزیہ کیا۔ یہ فوجی اڈے عسکری لحاظ سے نہایت اہمیت کے حامل ہیں۔

US-military-2

ماہرین نے بتایا کہ کلائمٹ چینج کے باعث امریکا میں مستقل آنے والے سمندری طوفان اور سطح سمندر میں اضافہ ان فوجی اڈوں، ان کے تحت چلائے جانے والے آپریشنز اور یہاں موجود تنصیبات کو متاثر کرے گا۔

:کلائمٹ چینج کے بارے میں مزید معلوماتی مضامین

کلائمٹ چینج کے باعث تاریخی مقامات خطرے کا شکار *

کلائمٹ چینج کے باعث جنوبی ایشیائی ممالک میں تنازعوں کا خدشہ *

کلائمٹ چینج سے نمٹنے کے لیے کاربن اخراج کو ٹھوس بنانے کا طریقہ *

جاری کی جانے والی رپورٹ کو ’امریکی فوج سطح سمندر میں اضافے کا پہلا شکار‘ کا نام دیا گیا ہے۔

ماہرین کے مطابق 2050 تک یہ اڈے سیلاب سے 10 گنا زیادہ متاثر ہوں گے اور ان میں سے کچھ ایسے ہوں گے جو روز پانی کے تیز بہاؤ یا سیلاب کا سامنا کریں گے۔

Us-military-3

ان 18 اڈوں میں سے 4، جن میں کی ویسٹ کا نیول ایئر اسٹیشن، اور جنوبی کیرولینا میں میرین کورپس ڈپو شامل ہیں، صدی کے آخر تک اپنا 75 سے 95 فیصد رقبہ کھودیں گے۔

حکام کے مطابق پینٹاگون ان تمام خطرات سے واقف ہے اور کلائمٹ چینج کے خلاف مؤثر اقدامات اٹھانا چاہتا ہے لیکن حال ہی میں امریکی کانگریس کی ایک کمیٹی نے ایک بل پاس کروالیا ہے جس کے تحت پینٹاگون کو ماحولیات سے مطابقت پیدا کرنے کی حکمت عملی یعنی کلائمٹ ایڈاپٹیشن اسٹریٹجی کے لیے مالی معاونت روک دی گئی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top