The news is by your side.

Advertisement

وزیراعلیٰ سندھ کی مفتی تقی عثمانی سے ملاقات

کراچی : مفتی تقی عثمانی کا کہنا ہے کہ گاڑی پر چاروں طرف سے گولیاں ماری گئیں تاہم وہ اور اہل خانہ معجزانہ طور محفوظ رہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کراچی میں مفتی تقی عثمانی سے ان کے مدرسے میں ملاقات کی۔

وزیراعلیٰ سندھ نے مفتی تقی عثمانی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے آپ پر خاص کرم کیا ہے، اللہ نے آپ اور آپ کی فیملی کو محفوظ رکھا۔

اس موقع پر مفتی تقی عثمانی نے کہا کہ گاڑی پرچاروں طرف سے گولیاں ماری گئیں۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز کراچی کی نیپا چورنگی پرممتار عالم دین مفتی تقی عثمانی قاتلانہ حملے میں محفوظ رہے تھے جبکہ ان کا گارڈ محمد فاروق جاں بحق ہوگیا تھا۔

ایڈیشنل آئی جی کراچی امیر شیخ کا کہنا تھا کہ یہ واقعہ فرقہ واریت کی سازش نہیں لگتی بلکہ پاکستان اور کراچی کا امن خراب کرنے کی کوشش ہے۔

کراچی کی نیپا چورنگی پر ممتاز عالم دین مفتی تقی عثمانی قاتلانہ حملے میں محفوظ رہے جب کہ ان کے دو گارڈ جاں بحق ہو گئے۔

وزیراعظم کی معروف عالم دین مفتی تقی عثمانی پر حملے کی مذمت

وزیراعظم عمران خان نے مفتی تقی عثمانی پر فائرنگ کے واقعے کی مذمت اور حملے میں سیکیورٹی گارڈ کے جاں بحق ہونے پردکھ کا اظہار کیا تھا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ مفتی تقی عثمانی جیسی قابل قدر ہستی پرحملہ سازش ہے اور اس کو بے نقاب کرنے کے لیے ہرممکنہ کوشش بروئے کار لائی جائے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں