The news is by your side.

Advertisement

‘پاکستانی اداروں کیخلاف زہرآلود گفتگو پر جواب دینا ہوگا’

وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز نے کہا ہے کہ ایسا نہ سمجھیں یہ جو مرضی کہتا رہے گا اسے پاکستانی اداروں کیخلاف زہرآلود گفتگو پر جواب دینا ہوگا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز نے پاک پتن میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیراعظم عمران خان کا نام لیے بغیر کہا کہ ایسا نہ سمجھیں کہ یہ جو مرضی کہتا رہے گا اسے پاکستانی اداروں کیخلاف زہرآلود گفتگو پر جواب دینا ہوگا۔

حمزہ شہباز نے کہا کہ پاکستان کے سفارتی محاذ پر دوست ممالک اس کی زبان کا نشانہ بنے، اس نے پاکستانی قوم سے جو وعدے کیے وہ جھوٹے ثابت ہوئے، نوجوانوں کے ایک کروڑ نوکریوں کا خواب چکناچور کیا، کہتا تھا کہ میں کشمیر کا وکیل بنوں گا پاکستان کا وکیل بنوں گا، لیکن دنیا میں نہ پاکستان اور نہ ہی کشمیر کا وکیل بن سکا۔

وزیراعلیٰ پنجاب نے مزید کہا کہ پاکستان کا آئین توڑا اور کہتا ہے رات 12 بجے سپریم کورٹ کیوں کھولی، اس وقت آئین کی پاسداری کیلئے سپریم کورٹ کے دروازے کھلے،

مہنگائی نے آج لوگوں کو ذہنی مریض بنادیا ہے، ہماری پہلی ترجیح ہے لوگوں کی زندگی میں آسانی پیدا کی جائے، انہوں نے کہا کہ پنجاب میں گورنر نے آئین کے ساتھ کھلواڑ کیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں