The news is by your side.

Advertisement

سندھ اور وفاق کا انسداد نارکوٹکس پر سمجھوتا نہ کرنے کا فیصلہ

کراچی : سندھ اور وفاق نے ملک میں انسداد نارکوٹکس پر سمجھوتا نہ کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ کی زیر صدارت اجلاس میں ہر قسم کی نارکوٹکس کو کنٹرول کرنے اور منشیات کے عادی لوگوں کی بحالی کے کام کو مزید بہتر کرنے کا فیصلہ کیا گیا، اس موقع پر وزیر سیفران شہریار آفریدی بھی موجود تھے۔

اس اہم اجلاس میں وفاقی وزیر سیفران شہریار آفریدی، چیف سیکریٹری سندھ ممتاز شاہ، صوبائی وزیر نارکوٹکس مکیش کمارچاولہ ، وزیراعلیٰ کےمشیرمرتضیٰ وہاب،ڈی جی میری ٹائم سیکورٹی،چیف کلکٹر کسٹمز، ڈپٹی ڈی جی کوسٹ گارڈ ،آئی جی سندھ ، سیکریٹری داخلہ ،کمشنر کراچی ، ایڈیشنل آئی جی کراچی ،سیکریٹری ایکسائز اینڈنارکوٹکس، اور ڈپٹی ڈی جی رینجرز نے شرکت کی۔

اجلاس میں ہر قسم کی نارکوٹکس کوکنٹرول کرنے اور منشیات کے عادی لوگوں کی بحالی کے کام کو مزید بہتر کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

وزیراعلیٰ سندھ مرادعلی شاہ نے کہا کہ حکومت سندھ نےگٹکےپرپابندی لگائی ہے، ہر قسم کی نارکوٹکس کی فروخت کیخلاف سخت اقدام اٹھایا، آئس ڈرگ کو مکمل طورپر کنٹرول کیا گیا ہے ، آئس ڈرگ اسکولز تک پہنچ گئی تھی جوکہ خطرناک تھا، آئس ڈرگ اسکول تک پہنچنے کی وجہ سے گرفتاریاں کی گئیں، ہم اپنے مستقبل کےمعماروں کومحفوظ رکھناچاہتےہیں۔

وزیرسیفران شہریارآفریدی کا کہنا تھا کہ انسدادنارکوٹکس پرکوئی سمجھوتہ نہیں ہو گا، منسٹری آف نارکوٹکس سندھ حکومت سےتعاون کرے گی ، سکھر اور کراچی میں منسٹر آف نارکوٹکس کےسینٹرزہیں۔

چیف سیکریٹری سندھ ممتاز شاہ نے بتایا کہ منشیات ملک میں نہیں بن رہی،باہرسےآ رہی ہیں، ہمیں منشیات کوسرحد پرروکنا ہوگا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں