The news is by your side.

Advertisement

سی این جی بند اور پیٹرول مہنگا ہے، رکشہ ڈرائیور رو پڑا

کراچی : شہر قائد میں گزشتہ کئی روز سے سی این جی کی سپلائی معطل ہونے سے ڈرائور طبقہ شدید مالی مشکلات سے دو چار ہے خصوصاً رکشہ ڈرائیور سخت پریشان ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ملک میں گیس کا بحران شدت اختیار کرگیا ہے، سندھ اور بلوچستان میں سی این جی اسٹیشنز دو ہفتے بعد بھی نہیں کھل سکے، ذرائع کا کہنا ہے کہ پانچ جولائی تک مزید بند رکھے جائیں گے۔

سستے ایندھن کے حصول کے لیے عوام خصوصاً رکشہ ڈرائیور طبقہ انتظار کی بھاری قیمت ادا کررہا ہے۔ رکشہ ڈرائیورز مذکورہ صورتحال پر شدید پریشان ہیں ان کا کہنا ہے کہ روز کمانے والوں کے لئے گیس کی بندش مناسب نہیں۔

موجود ہ صورتحال میں سی این جی سے رکشہ چلانے والا طبقہ انتہائی پریشانی میں مبتلا ہے، ایک رکشہ ڈرائیور اے آروائی نیوز کے نمائندے سے اپنی پریشانی بیان کرتے ہوئے روپڑا۔

رکشہ ڈرائیور کا روتے ہوئے کہنا تھا کہ غصے میں صبح ناشتہ کیے بغیر گھر سے نکلا ہوں، پریشانیوں نے ہر طرف سے گھیر لیا ہے پیٹرول پر رکشہ چلانے سے کچھ نہیں بچتا۔

ایک اور رکشہ ڈرائیور نے کہا کہ ایک طرف ہوشربا مہنگائی تو دوسری طرف سی این جی اسٹیشن بند ہیں، سی این جی کی بندش سے ہمارے گھروں کے چولہے ٹھنڈے ہورہے ہیں، ہم محنت کش بھوک سے مررہے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں