The news is by your side.

Advertisement

تابوت میں سانس لیتے شخص نے رونگٹے کھڑے کردیے، بچے اورکمزور دل والے ویڈیو نہ دیکھیں

تامل ناڈو : بھارت میں ایک ضعیف مریض کو اس کے گھر والوں نے زبردستی شیشے کے تابوت میں بند کردیا، اہل خانہ اس کی موت کا انتظار کررہے تھے۔

بھارت کی ریاست تامل ناڈو میں ایک 74 سالہ شخص کو اسپتال سے فارغ ہونے کے بعد اس کے اہل خانہ نے مبینہ طور پر اس کی موت کے انتظار میں شیشے کے ایک ٹھنڈے بکس میں رکھ دیا، ایسے تابوت میں عموماً مُردوں کو رکھا جاتا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق حکام کا کہنا ہے کہ بالا سوبرامنیا کمار کے بھائی نے یہ ٹھنڈا بکس کسی ایجنسی سے لیا تھا۔ جب وہ ڈبہ واپس لینے اس ایجنسی کا ایک افسر ان کے گھر پہنچا تو اس نے دیکھا کہ بکس میں موجود شخص مشکل سے سانس لے رہا ہے جس پر اس نے فوراً مدد طلب کی۔

ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ 74 سالہ بالا سوبرامنیا اس بکس کے اندر سانس لینے کی کوشش کر رہا ہے، واقعے کی تحقیقات کرنے والے افراد کا کہنا تھا کہ بالا سوبرامنیا حال ہی میں ہسپتال سے نازک حالت میں فارغ کرکے گھربھیج دیا گیا تھا۔

تحقیقاتی افسر نے بتایا کہ گھر آنے پر اس کے بھائی نے ٹھنڈے بکس کا انتظام کر رکھا تھا کیونکہ وہ مبینہ طور پر بالا سوبرامنیا کے مرنے کرنے کا انتظار کر رہے تھے۔

ایجنسی کے اہلکار نے جب بالا سوبرامنیا کو ڈبے میں زندہ پایا تو انہوں نے مدد طلب کی جس کی وجہ سے ان کو بچا لیا گیا، واقعے کے بارے میں سن کر مُردوں کے لیے گاڑیاں فراہم کرنے والے دیوالنگم بھی بالا سوبرامنیا کی مدد کے لیے ان کے گھر پہنچے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس آدمی کو پوری رات اس بکس کے اندر رکھا گیا۔ ایجنسی والے نے پریشان ہو کر مجھے کال کی۔ مجھے مریض کے اہل خانہ نے بتایا کہ ان کی روح نے اب تک ان کا جسم نہیں چھوڑا اور وہ اس بات کا انتظار کر رہے تھے۔

پولیس حکام نے میڈیا کو بتایا کہ کسی کی جان خطرے میں ڈالنے اور بے پروائی برتنے کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے اور تحقیقات کی جارہی ہیں۔

پولیس کے مطابق بالا سوبرامنیا ایک نجی کمپنی کے لیے اسٹور کیپر کے طور پر کام کرتے ہیں، وہ اپنے بھائی اور بھتیجی کے ساتھ رہتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں